اولاد کی خواہشمند یہ چیز کا بھی استعمال نہ کریں

آج ہم بات کریں گے ۔ ایسی چیز کے بارے میں جس کا استعمال کافی لوگ کررہے ہیں۔ مگر لوگوں کو یہ نہیں پتا کہ اگر اس کا استعمال عورت کرلے تو وہ ماں نہیں بن سکتی۔ اور اس کے ہاں حمل نہیں ٹھہر سکتا۔ اور یہ جو چیز ہے۔ آج کل بہت سے زیادہ لوگ انٹرنیٹ سے خرید کر استعما ل کررہے ہیں۔

روزانہ زندگی میں استعمال کررہے ہیں۔ مگر اس کے اتنے نقصانات ہیں جو ایک عورت ہے۔ وہ ماں نہیں بن سکتی۔ اور جو اس کاحمل ہوتا ہے۔ وہ خطرے میں بن جاتا ہے۔ آج آپ کو ایک ایسی چیز کے بارے میں بتائیں گے۔ آج کل مورنگا آگیا ہے۔ جس کو اردو میں ہوہنجڑہ کہا جاتا ہے۔ اس کا استعمال بہت زیادہ تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ اس بات میں کوئی شک نہیں ہے۔ کہ اس کے اندر پروٹین پایا جاتا ہے۔ آئرن پایا جاتا ہے۔ اس کے بہت ہی زیادہ فائدے ہیں۔ ایسے تمام عورتیں جو کہ ماں بننا چاہتی ہیں۔ جو حمل ٹھہرانا چاہتی ہیں۔ ان کے لیے اس کا جو نقصان ہے وہ بہت ہی زیاد ہ ہے۔ کیونکہ یہ حمل کے لیے چیز اچھی نہیں ہے۔ یہ بہت ہی زیادہ گرم اور خشک طبیعت کا ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے حمل کوخطرہ ہوجاتا ہے۔اور عورت کےاندر بانجھ پن تک پیدا ہوسکتا ہے۔ تو ایسے تما م عورتیں جو کہ ماں بننا چاہتی ہیں ۔ انہو ں نے مورنگا کا استعمال نہیں کرنا۔ ایسے تمام مردحضرات

جو کمزور ہیں۔ جو کہ جسمانی طور پر کمزور ہیں ۔جن کے اندر وٹامن کی کمی اور طرح طرح کے مسائل ہیں۔ آپ لوگ اس صورت میں اس کو استعمال کرسکتے ہیں۔ لیکن ایسے تمام عورتیں جن کی ابھی نئی نئی شادی ہوئی ہے۔ وہ حمل ٹھہرانا چاہتی ہیں۔ اور ماں بننا چاہتی ہیں۔ انہوں نے مورنگا کااستعمال بالکل نہیں کرنا۔ مرد حضرات اورباقی لو گ بھی اس طرح کی کوئی چیز استعمال کریں۔ توآپ کسی ڈاکٹر سے مشورہ کرلیں۔ کیونکہ اکثر آ پ لوگوں کو اکثر فائدے وغیرہ بتائے جاتے ہیں۔ کہ یہ فلاں جڑ ی بوٹی ہے۔ اس کے یہ یہ فوائد ہیں۔ آپ اس کو استعمال کریں۔ یہ ہوجائے گا وہ ہوجائے گا۔ یہ ساری باتیں ٹھیک ہیں۔ فوائد ہوتے ہیں۔ مگر ہر چیز کو استعمال کرنے کا ایک پروپر طریقہ ہوتا ہے۔ ایک لمٹ ہوتی ہے۔ اور استعمال کرنے کاایک وقت ہوتا ہے۔ تو آپ لوگ کسی ڈاکٹر کے پاس یا حکیم کے پاس جاکر استعمال کرنےکا طر یقہ بھی پتا کریں۔ اور ان سے ایک با ر مشورہ بھی لیں کہ وہ آپ کی شکایت کودیکھتے ہیں آپ نے اس چیز کا استعمال کرنا ہے۔ یا نہیں کرنا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *