ہر نماز کے بعد صرف 11بار پڑھ لیںپیسہ دروازے توڑ کر داخل ہوگا

انسان کی زندگی میں اصل چیز اللہ تعالیٰ کی رحمت اور فضل کا شامل حال ہونا ہے اگر انسان کی زندگی میں خیر وبرکت ہوگی تو کبھی پریشانی نہیں ہوگی ۔ آج ہم آپ کو ایسا وظیفہ بتائیں جس وظیفہ کی برکت سے اللہ تعالیٰ رزق کا دروازہ کھول دیتے ہیں اور ساری پریشانیاں تکلیفیں دور فرما دیتا ہے ۔ اللہ تعالیٰ

کا فرمان ہے کہ جس نے میرے لیے ولی کو تکلیف دی میرا اس کے خلاف اعلان جنگ ہے ۔ اگر بندہ کسی چیز کے ساتھ میرا قرب حاصل کرنے کی کوشش کرتا ہے مجھے وہ اس سے بھی زیادہ پسند ہے جو میں نے اس پر فرض کیا۔ میرا بندہ نوافل کے ساتھ میرا قرب حاصل کرتا ہے تو میں اس سے محبت کرنے لگتاہوں ۔جب بخشش طلب کرتا ہے تو میں تب بھی اسے عطاء کرتا ہے ۔ جب پناہ میں آنا چاہتا ہے تو پناہ بھی عطاء کرتا ہوں۔جب اللہ تعالیٰ کا قرب حاصل ہوتا ہے تو دنیا کی ہر چیز سے تعلق ٹوٹ کر اللہ تعالیٰ سے تعلق جڑ جاتا ہے ۔ اس کی کوئی بھی خواہشات باقی نہیں رہتی ۔ یہ کتنی بڑی فضیلت ہے جو بندہ اللہ تعالیٰ کا قرب حاصل کرلے وہ اللہ تعالیٰ سے جو مانگتا ہے اللہ تعالیٰ اسے عطاء فرماتا ہے ۔آپ کو وہ وظیفہ بتاتے ہیں جس

سے نہ صرف غربت ختم ہوتی ہے بلکہ اللہ تعالیٰ رزق کے ایسے دروازے کھول دیتا ہے انسان کی توقع سے بھی زیادہ عطاء فرما دیتا ہے ۔ اس وظیفہ کیلئے یہ واقعہ سناتے ہیں جو کہ اس سے متعلق ہے یہ واقعہ سلسلہ نقشبندیہ کا واقعہ ہے جو کہ انہوں نے اپنی زبان سے خود بیان کیا ۔کہتے ہیں کہ اکثر اوقا ت اپنے ذکر میں مصروف رہتا تھا جس کی وجہ سے ہمارے گھر کے حالات بہت خراب ہوگئے ۔ غربت افلاس او رتنگی تک حالات ہوگئے ۔جب پریشانی زیادہ بڑھ گئی تو میں نے شیخ سے اس کے بارے میں ذکر کیا حضرت گھر کے حالات خراب ہیں آپ دعا فرمائیے حضرت نے مجھے ایک گندم کی بوری بھی دی اور کاغذ کا ٹکڑا بھی دیا ۔انہوں نے سوچا اس پر کیا لکھا ہوا جب دیکھا تو اس پر لکھا ہو تھا کہ حسبنا اللہ ونعم الوکیل ونعم المولیٰ

ونعم النصیرمیں نے وہ کاغذ کا ٹکڑا بوری میں ڈال دیا۔ وہ کہنے لگے آج چالیس سال ہوگئے ہیں میں اس بوری سے گندم نکال کرکے استعمال کررہا ہوں ہر روز کے مہمانوں کیلئے کھانا بھی بناتا ہے ۔ آج وہ گندم کم نہیں ہوئی ۔ یاد رہے کہ جو اللہ تعالیٰ کا ہوجاتا ہے تو ساری کی ساری مخلوق اس کی خدمت میں لگ جاتی ہے خود اللہ تعالیٰ اس کا ہوجاتا ہے ۔ حضورﷺ کا ارشاد ہے حسبن اللہ ونعم الوکیل وہ کلمہ ہے جب حضرت ابراہیم ؑ کو آگ میں ڈالا جارہا تھا تو انہوں نے یہ کلمہ اس وقت پڑھا تھا ۔مفسرین کرام فرماتے ہیں اللہ تعالیٰ نے حضرت ابراہیم ؑ کی اس کلمہ کی برکت سے مدد فرمائی اور آگ کو حکم دیا کہ ٹھنڈی اور سلامتی والی بن جا۔ ہر نماز کے بعد گیارہ مرتبہ حسبنا اللہ ونعم الوکیل علی اللہ توکلنا اس کے پڑھنے سے ہر مشکل کام آسان ہوجاتا ہے ۔ آپ کو دینی ودنیاوی اخروی زندگی میں بھی کامیابیاں ہی کامیابیاں حاصل ہوں گی ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *