عید کا گوشت محفوظ کرتے وقت

پاکستان کی کوکنگ دو بڑے چینل لوگوں کو عید کے گ وشت کو محفوظ کرنے کے حوالےسے غلط طریقہ بتار ہے ہیں۔ ایک دوسرے کی لاگت بازی میں ایک کہہ رہا ہے کہ گ وشت کو بالکل دھونا نہیں چاہیے ۔ جبکہ دوسرا کہہ رہا ہے کہ گ وشت کو بوائل کر لینا چاہیے۔یہ دونوں ہی سراسر غلط طریقے ہیں۔

اس لیے آپ کو عید کے گ وشت کو محفوظ کرنے کا صیحح طریقہ بتانے جارہے ہیں۔ جس طریقےسے اگرآپ گ وشت کو محفوظ کریں گے۔ نہ آپ کا گ وشت خراب ہوگا۔ اور نہ ہی آپ کے گ وشت میں بدبو آئے گی۔ اور بالکل ہائی جینک رہے گا ۔ جب بھی آپ نکالیں گے۔ تو فریش ہوگا۔ اب آپ کو بتاتے ہیں۔ آپ کے پاس اگر کوئی بھی گ وشت ہے تو اس طریقےسے محفو ظ کرسکتے ہیں۔ آپ نے گ وشت لینے کے بعد آپ نے پانی لے لینا ہے۔ یعنی کہ آپ نے گ وشت کو دھو لینا ہے۔ اس کی اچھی طرح بوٹی بوٹی پکڑ کر دھو نا ہے۔ اچھی طرح سے اس کی صفائی کر لیں۔ اس کے بعد آپ نے انگور ی سرکہ یعنی کہ سفید سرکہ لینا ہے۔ جس برتن میں گ وشت کو دھو رہے ہیں۔ ا س میں پانی ڈال کر اور اس میں وائیٹ سرکہ ڈال کر گ وشت کوبھگو کر رکھ دینا ہے۔ اس کے بعد گ وشت کو دوبارہ واش کریں گے۔ اصل میں ہمارےگوشت کے خراب ہونے کا اصل مسئلہ یہ ہوتا ہے ان میں

خ ون ہوتا ہے۔جب خ ون رہ جاتا ہے تو خ ون میں بیکٹیریا پیدا ہوتےہیں۔ جس سے گ وشت میں سے بدبو آتی ہے۔اور گ وشت خراب ہوجاتا ہے۔جب آپ سرکہ ڈال لیتےہیں۔ اور دو منٹ کےلیے گ وشت کو بھگو دیتے ہیں۔ تو گ وشت کے اندر جتنا بھی خ ون موجود ہوتا ہے وہ تمام کلئیر ہوجاتا ہے۔ اور جتنے بھی بیکٹیر یاز موجود ہوتے ہیں۔ وہ بھی مرجاتے ہیں۔ کیونکہ سرکہ کے اندر طاقتور اینٹی بیکٹیرئیل اور اینٹی مائیکر و پراپرٹیز موجود ہوتی ہیں۔ دو منٹ جو سرکہ میں بھگویا تھا وہ پانی نکا ل لیں۔ اور ایک بار پھر گ وشت کو دھو لیں۔ دوبارہ گ وشت کو دھونے کےبعدآپ نے کیا کرنا ہے ۔ ایک چھاننا لے لینا ہے جس کے سوراخ ہوتے ہیں۔ اس میں گ وشت کو نچوڑ کر اس چھاننے میں ڈال دیں۔ اس طرح اپنے گ وشت میں چھاننے میں رکھ دیں۔ پندرہ منٹ کےلیے گ وشت کو چھاننےکے اندر پڑا رہنے دیں۔ تاکہ جتنا بھی پانی گ وشت کے اندر ہے۔ وہ چھاننے کے ذریعے نکل جائے۔ اس

کے بعد دوسرا اسٹیپ آپ کو بتاتے ہیں۔ جتنا پانی نکل جائے تو اسکے بعد آپ نے کیا کرنا ہے۔ کہ آپ نے شاپر لے لیں۔ آپ نے دو کلو تک کا شاپر لینا ہے۔ شاپر بالکل نیا لینا ہے۔ آپ نے شاپر صرف سفید لینا ہے۔ اور کلر شاپر میں بہت سے بیکٹیریا وغیرہ موجود ہوتےہیں۔ جتنا گ وشت آپ نے رکھنا ہے۔ ایک بار کےپکانے کےلیے الگ الگ رکھ لیں۔ تو شاپر کو گرہ لگا دینا ہے اور شاپر کے اندر سے ہوا نکال لینی ہے۔ اور گ وشت کو زیادہ دبا کر نہیں رکھنا ہے۔ تھوڑا سا گرہ ڈھیلا چھوڑ دیں۔ تا کہ جب فریز ہوجائے تو پھر نکالنے میں مشکل نہ ہو۔ ان کی ڈھیریاں بنا لینی ہیں۔اور فریج یا فریزر میں رکھ دیں۔ یہ چھ مہینے تک بھی آپ استعمال کرسکتے ہیں۔ اکثر لوگ عید کا گ وشت محفو ظ کرکے دس مہینوں تک کھا رہے ہوتے ہیں۔ جو کہ بالکل غلط ہے۔ کیونکہ اسلامی نظریے کےمطابق قربانی کو گ وشت کو محرم سے پہلے ختم کرلینا چاہیے ۔ لیکن ہم لوگ دس یا ایک سال تک کھارہےہوتے ہیں۔ جو کہ غلط ہے۔ اگر آپ اس طریقے سے گ وشت کو سٹور کرتے ہیں۔ تو اس بات کی گارنٹی ہے کہ آپ کم سے کم آٹھ یا د س مہینے تک یہ گ وشت استعمال کرسکتےہیں۔ اور اس طریقے سے نہ بدبو پیدا ہوگی۔ تو اس طریقے کو اپنائیں ۔ غلط طریقوں پر مت جائیں ۔ ورنہ گ وشت خراب ہوجائےگا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *