صرف 11 بار یہ پڑھ کر شہادت کی انگلی اپنے چہرے پر پھیر لو

ایک صحابی تھے جن کا نام ہے حضر ت حبیب بن صدیق رضی اللہ عنہ ۔ یہ صحابی کہیں سفر پر جارہے تھے۔ ان کا پاؤں اتفاقاً ایک زہریلے سانپ کے انڈے پر آگیا۔ اور وہ زہریلے سانپ کا انڈہ ٹوٹ گیا۔ اور اس کا ز ہ ر کے اثر حضرت حبیب بن صدیق رضی اللہ عنہ کی آنکھیں بالکل سفید ہوگئیں۔ اور آپ

کی بینائی ختم ہوگئی۔ یہ حال دیکھ کر ان کے والد بہت پریشان ہوئے۔ اور حضرت حبیب بن صدیق رضی اللہ عنہ کو لے کر حضور سرور کائنات ﷺ کی خدمت میں پہنچے ۔ حضور اکرم ﷺ نے سار ا قصہ سنا۔ آپ نے پورا قصہ سننے کے بعد اپنا لعاب مبارک ان کی آنکھوں میں ڈال دیا۔ جب رسول پاک ﷺ نے اپنا بابرکت لعاب ان کی آنکھوں میں ڈالا تو حضرت حبیب بن صدیق کی اندھی آنکھیں فوراً روشن ہوگئیں۔ او رانہیں نظر آنے لگا۔ جو یہ حدیث روایت کررہے ہیں۔ وہ راوی کا بیان یہ ہے کہ میں نے خود حضرت حبیب بن صدیق کو دیکھا اس وقت ان کی عمر اسی سال کی تھی۔ا ور آنکھیں تو ان کی بالکل سفید تھیں۔ مگر رسول پاک سرو ر دوعالم ﷺ کے لعاب مبارک کے اثر سے نظر اتنی تیز تھی ۔ کہ سوئی میں دھاگہ ڈال لیتے تھے۔ اگر کسی زہریلی چیز نے آ پ کو کاٹ لیا۔ مچھر یا کسی بھیڈ وغیرہ نے بچے کو کاٹ لیا ۔ اگر آپ بتائے گئے طریقے کے مطابق یہ عمل کریں گے۔ انشاءاللہ!

آپکو اللہ تعالیٰ شفاء نصیب فرمائیں گے۔ عمل یہ ہے کہ آپ نے پہلے تین دفعہ درود پاک پڑھنا ہے ۔ اس کے بعد آپ نے گیارہ مرتبہ تعوز پڑھنا ہے۔ یعنی گیارہ مرتبہ آپ نے ” اعوذ باللہ من الشیطن الرجیم” پڑھنا ہے۔ اس کے بعد آپ کی یہ جو شہادت والی انگلی ہے۔ آپ نے اس کو زبان کے ساتھ لگا نا ہے۔ اور اپنے منہ کا لعاب اس پر لگا کرآپ نے اس زخم پر یا دانے پر اگرمچھر نے کاٹا ہے۔ اگر بھیڈ نے کاٹا ہے۔ آ پ نے اپنا لعاب لگا دینا ہے۔ اور ذہن کے اندر یہ بات رکھنی ہے کہ میں سنت پرعمل کررہاہوں۔ یعنی لعاب کےساتھ علاج کرنا اور غم کرنا یہ ہمارے پیارے آقاﷺ سے ثابت ہے۔ ایک واقعہ جو حضرت حبیب بن صدیقہ آپ کے سامنے عرض کیا۔ اسی طرح لعاب کے ذریعے سے دم کا واقعہ ایک وہ بھی کتابوں میں آتا ہے ۔ جب سیدنا صدیقہ اکبر رضی اللہ عنہ کو ایک کا لے سانپ دے ڈسا۔آپ کی ایڑی پر تو حضور اپنا بابرکت لعاب ایڑ ی پر لگایا۔ جس کے ذریعے سے سیدنا ابو بکر صدیق رضی اللہ عنہ تکلیف سے نجات حاصل کرچکتے تھے اور آپ کو کوئی پریشانی نہیں تھی۔ اور آپ کی ایڑی میں ز ہ ر کا اثر نہیں ہوسکا۔ اس لیے ہمارے نبی پاک ﷺ کا ہر ہر عمل وہ انتہائی قیمتی ہے۔ جو عمل سنت کے ساتھ کیا جائے ۔ یا سنت سے ثابت ہوجائے ۔ اس میں اتنی تاثیر اور طاقت ہے۔ آپ اس کا اندازہ ہی نہیں لگا سکتے ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *