عید کے دن یہ کام ضرور کرنا

امام علی ؑ کی خدمت میں ایک شخص آیا۔ اور دست ادب کو چھوڑ کر عرض کرنے لگے یا علی ! عید کے دن سب سے افضل عمل کونسا ہے؟ بس یہ کہناتھا تو امام علی ؑ نے فرمایا: اے شخص یادرکھنا! عید کے سب سے افضل عمل یہ ہے کہ انسان ہر اس شخص کے پاس جا کر معافی مانگ لے۔ جس کا

دل اس نے دکھایا ہے ۔ میں نے اللہ کے رسول اللہﷺ سے سنا ۔ کہ اللہ تعالیٰ ایسے انسان کو جنت میں افضل مقام دے گا۔ جو عید کے دن اپنے رشتہ داروں کے گھروںمیں جا کر ان سے ملنے جاتا ہے اگر ان کے بیچ میں رنجشیں ہیں۔ نفرتیں ہیں تو ان کو مٹا دیتا ہے اگر کوئی دوست اس سے روٹھا ہے تو اس کو منانےکی کوشش کرتا ہے یا درکھنا! اللہ کی طرف سے انسان کو عید کا دن ایک تحفے کی صورت میں ملا ہے تاکہ انسان اپنےآپس کی رنجشیں ختم کردے ۔ لیکن جو انسان عید کے دن بھی اپنے دل میں نف رت رکھتا ہےتو اللہ تعالیٰ ایسے شخص سے لعنت بھیجتا ہے۔ اور اپنے فرشتوں سے کہہ دیتا ہے کہ اس شخص کے مقدر میں دوزخ لکھ دو۔ جو میرے ہی دنیا میں رہ کر میرے بندوں سے پیار نہیں کرتا۔ حضرت علی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ آنحضرت ﷺ نے مجھ کو بھیجا میں قربانی کے اونٹوں کے پاس کھڑا ہوا۔ میں نے ان کا گوش ت بانٹا۔ پھر آپؐ نے حکم دیا تو میں نے ان کی جھولیں اور کھالیں بھی بانٹ دیں۔ حضرت اُم سلمہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے ۔ نبی کریم ﷺ نے فرمایا جب عشرہ ذوالحجہ شرو ع ہو جائے اور تم میں

سے کوئی شخص قربانی کرنے کا ارادہ کرے تو اپنے بالوں کو نہ کٹوائے اور ناخنوں کو بالکل نہ تراشے۔ حضرت عامر بن واثلہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ میں علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہ کے پاس تھا اُن کے پاس ایک شخص نے کہا کہ نبی کریم ﷺ آپؓ سے سرگوشیوں میں کیا کہتے تھے۔ علی رضی اللہ عنہ ناراض ہو گئے اور فرمایا : رسول کریم ﷺ نے مجھے کوئی رازکی بات نہیں بتائی جسے میں نے اور لوگوں سے چھپایا ہو البتہ آپؐ نے مجھے 4 باتیں ارشاد فرمائی ہیں اس نے پوچھا اے امیر المومنین وہ کیا باتیں ہیں؟ تو حضرت علیؓ نے کہا کہ نبی کریم ﷺ نے فرمایا جو شخص اپنے والد پر لعنت کرے اس پر اللہ کی لعنت ہے ۔جو شخص غیر اللہ کے لئے ذبح کرے اس پر اللہ کی لعنت ہے۔ اور جو شخص کسی بدعتی کو پناہ دے اس پر اللہ تعالیٰ کی لعنت ہے اور جو شخص زمین پر(حد بندی کے )نشانات کو مٹائے اس پر اللہ تعالیٰ کی لعنت ہے۔ حضرت عبداللہ بن قرط رضی اللہ عنہ ، نبی کریم ﷺ سے روایت کرتے ہیں کہ آپؐ نے فرمایا بے شک تمام ایام میں سے قربانی اور اس کے بعد والا دن اللہ تعالیٰ کے ہاں بڑی عظمت والا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *