جمعہ کے دن مغرب یا عشاء کے بعد گیارہ مرتبہ پڑ ھیں

ناظرین و سامعین !!! السلام علیکم !!! ناظرین میں آج آپ کی خدمت میں ایک ایسا عمل لے کر حاضر ہوا ہوں کہ جس کو کرنے کی برکت سے آپ کے رزق کی تمام تر پریشانیاں ، آپ کے رزق کی تمام تر مصیبتیں، آپ کی تمام تر پریشانیوں اور آپ کی محتاجیوں سے اللہ پاک آپ کو نجات عطا فر ما ئیں گے

اور آپ کو وسعت اور برکت والی زندگی اور وسعت والی اور برکت والی اور خوشحالی والی زندگی اللہ تعالیٰ آپ کو عطا فر ما ئیں گے۔ یہ عمل جمعہ کے دن کے حوالے سے خاص ہے تو اس عمل کو جمعتہ المبارک کے دن نمازِ مغرب اور نمازِ عشاء کے درمیان آپ نے اس عمل کو کر لینا ہے۔ اگر آپ کے پاس وقت ہو تو نمازِ مغرب کے بعد کریں یعنی مغرب اور عشاء کے درمیان کر لیں اور اگر آپ کے پاس مغرب کی نماز کے بعد وقت نہ ہو تو آپ نمازِ عشاء کے بعد بھی یعنی رات میں بھی اس عمل کو کر سکتے ہیں۔ انشاء اللہ میرا اللہ پاک اس عمل کے کرنے کی برکت سے آپ کو ضرور فائدہ عطا فر مائیں گے۔ عمل کی طرف جانے سے پہلے تمام دوستوں سے گزارش ہے کہ اس عمل کو بغو ر سنیے ۔ تا کہ اس عمل پر آپ اچھے سے عمل کر سکیں۔ تو ناظرین عمل کی طرف بڑھتے ہیں۔ آپ نے یہ عمل کرنا ہے۔ آپ نے نمازِ مغرب یا نمازِ عشاء کے درمیان کر نا ہے۔ آپ نے نمازِعشاء یا نمازِ

مغرب کے بعد کر سکتے ہیں مگر زیادہ بہتر یہ ہے کہ نمازِ مغرب کے بعد یہ عمل کیا جائے۔ تو آپ نے کر نا یہ ہے کہ نمازِ مغرب یا نمازِ عشاء جس نماز کے بعد بھی آپ عمل کر رہے ہیں تو آپ نے وہ نماز پوری ادا کرنی ہے۔ ہمارا یہ طریقہ، یہ فیشن چل گیا ہے کہ ہم فرض نماز پڑھتے ہیں مگر سنت اور نفعل نماز ادا نہیں کرتے۔ تو گزارش ہے کہ پوری نماز ادا کریں۔ جیسا کہ اگر نمازِ مغرب کے بعد کرنا چاہتے ہیں تو نمازِ مغرب پوری ادا کر یں اور اگر نمازِ عشاء ادا کرنا چاہتے ہیں تو نمازِ عشاء پوری ادا کریں۔ پیارے صحابہ کے نقشے پر چلتے ہوئے ان کی اس سنت کو زندہ کرتے ہوئے ہم نے یہ نفعل پڑھنے ہیں۔ یہ نفعل پڑھنے کا ہمیں الگ سے ثواب ہوگا۔اور اس نفعل کو صحابہ کرام کی سنت سمجھنی ہے ۔ اور نفعل پڑھ کر اللہ سے مانگیں گے تو ہماری دعا بھی جلدی قبول ہو گی۔ کیونکہ آپ نے سنا ہوگا کہ جب بھی صحابہ کو کوئی بھی مسئلہ درپیش ہوتا تو وہ نفعل نماز ادا کرتے تو اللہ پاک فوری ان کے مسئلے کا حل ان کو دے دیتے۔ ہم جانتے ہیں کہ ہماری نمازوں میں وہ بات نہیں ہے مگر ہم نقل تو کر ہی سکتے ہیں نا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *