لیکوریا سے ہونے والی کمزوری

آج ہم بات کریں گے کہ خواتین میں ایک مرض پایا جاتا ہے لیکوریا اس حوالےسے بات کریں گے ۔ آج جو نسخہ آپ کو بتائیں گے وہ خاص ہے۔ جیسا کہ آپ جانتے ہیں جن خواتین کو لیکوریا ہوجاتی ہےان کو کمزوری ہوجاتی ہے۔ دوسرے نمبر پر ان کو شدید قسم کا کمر میں درد ہوجاتا ہے۔ اور ٹانگوں میں

اور بے چینی وغیرہ یہ سب لیکوریا کی وجہ سے پیدا ہوتی ہیں۔ آج ہمارا نسخہ لیکوریا پر کام کرےگا۔ سوفیصد کام کرے گا۔ اسکے ساتھ ساتھ اگر کمر میں درد رہتا ہے ۔ٹانگوں میں بے چینی رہتی ہے ۔ کمزوری محسوس ہوتی ہے۔ وہاں پر بھی یہ بہت ہی اچھا کام کرےگا۔ اس نسخے کوبنانےکےلیے آپ کو موچرس چاہیے ہوگی۔ موچر س ایک گوند ہے ۔ دوسرے نمبر کمر کس، تیسرے نمبر اندر جوشیریں ، اسگند نگوری ، ماذو اور آخری نمبر مصری چاہیے ہوگی۔ یہ ساری چیزیں آپ کو پنسار سے مل جائیں گی۔ اگر مقدار کی بات کر لیں تو موچرس بیس گرام، کمر کس بیس گرام ، اندر جو شیریں دس گرام ، اسگند ناگوری دس گرام ، ماذو جلا ہوا دس گرام اور مصری ستر گرام چاہیے ہوں گے۔ اگر کوئی خواتین شوگر کی مریض ہیں ۔ وہ مصری کو استعمال نہیں کریں گی۔ کیونکہ شوگر کے اندر مصری استعمال نہیں کرسکتے ۔ اگر شوگر نہیں ہے۔ توآپ مصری شامل کرسکتے ہیں۔ آپ نے ان تمام چیزوں کا

سفوف تیار کرلینا ہے۔ اور کسی جار میں محفوظ کرلیں۔ اب بات کریں مقدارخوراک کی ۔تو پانچ گرام اس کی مقدار خوراک ہے۔ پانچ گرام صبح اور پانچ گرام شام کو لیں گے۔ تقریباً ایک سے ڈیڑھ چائے والا چمچ اس کی مقدار خوراک بنے گی۔ اور اگر آپ کو شوگر ہے ۔ اگر آپ نے مصری شامل نہیں کی ۔ تو پھرآ پ کی مقدار خوراک ڈھائی گرام ہوجائے گی۔ ڈھائی گرام صبح وشام لیں گے۔ اگر مصری شامل کریں گے۔ تو تقریباً پانچ گرام صبح اور پانچ گرام شام کو لیں گے۔ اس کو آپ خالی پیٹ بھی لے سکتےہیں۔ اگر کھانے کے بعد لینا چاہیں تو ایک سے دد گھنٹے کے بعد آپ اس کو استعمال کرسکتے ہیں۔ تازہ پانی سے بھی استعمال کرسکتےہیں ۔ اور دودھ سے بھی استعمال کرسکتے ہیں۔ ایک مہینہ استعمال کرنا ہے۔ ایک مہینہ باقاعدگی سے استعمال کرنا ہے۔ انشاءاللہ! آپ دیکھیں گے کہ آپ کی لیکوریا سے تین سے چاردن کے اندراندر بہت زیادہ افاقہ محسوس ہوگا۔ باقی ٹانگوں میں بے چینی اور کمرمیں درد تو وہ بھی آہستہ آہستہ جب استعمال کرتے رہیں گے ۔ توآہستہ آہستہ ختم ہوتی جائےگی۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *