ذی الحج کا پہلا عشرہ سورت الفجر کا عمل

اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید کے اندر ارشاد فرمایا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے ذی الحجہ کی دس راتوں کی قسم کھائی ہے ۔ “والفجر ، ولیال عشر” ان آیات کے اندر ذی الحجہ کی دس راتوں کی قسم کھائی ہے۔ جس سے معلوم ہو اکہ ماہ ذی الحجہ کا ابتدائی عشرہ اسلام میں خاص اہمیت کا حامل ہے۔ نبی کریم ﷺ نے ارشا دفرمایاکہ :

کوئی دن ایسا نہیں ہے جس میں نیک عمل اللہ تعالیٰ کے یہاں ان دس راتوں کی عمل سے زیادہ محبوب اور پسندیدہ ہو۔ نبی کریم ﷺ کی ایک اور حدیث مبارکہ ہے ۔ اللہ تعالیٰ کے نزدیک عشرہ ذی الحجہ سے زیادہ عظمت والے دوسرے کوئی دن نہیں ہیں ۔ لہٰذا تم ان دنوں میں تسبیح وتحلیل ا ور تکیبر و تمہید کثرت سے کیا کرو۔ دوسری بات تکبیر و تمہید اکثر لوگوں کو پتہ نہیں ہوتا۔ زیادہ تر وہ پڑھتے رہتےہیں ۔ لیکن ان کو یہ پتہ نہیں ہوتا۔ کہ اس تکبیر کا نام کیا ہے؟ تکبیر وتمہید ہم پڑھتے ہیں۔ ماہ ذی الحجہ کا مہینہ شروع ہوتا ہے تو ہر نماز کے بعد مساجد کے اندر یہ پڑھی جاتی ہیں۔ عید والے دن بھی پڑھی جاتی ہے۔ اور عید کے بعد بھی تین چار دن پڑھی جاتی ہے ۔ تکبیر یں یہ ہیں۔ پہلے ابتدائی دس دن جو ہیں۔ آپ نے تکبیر وتمہید جو ہے ۔یہ آپ نے روزانہ ہر نما ز کے بعدکم سے کم تین مرتبہ لازمی پڑھنی ہے۔ ہر نماز کے بعد کم سےکم تین مرتبہ لازمی آپ نے یہ تکبیر پڑھنی ہے۔

وہ تکبیر ” اللہ اکبر اللہ اکبر ، لا الہ الا اللہ واللہ اکبر اللہ اکبر وللہ الحمد” ہیں۔ یہ تکبیر یں ہم روزانہ پڑھتےہیں۔ لیکن ہمیں یہ معلوم نہیں ہوتا۔ ان کو تکبیر تمہید کہتےہیں۔ نبی کریمﷺ نے ارشادفرمایا کہ : ا کو کثرت سے پڑھا کرو۔ ا ب آپ کو عمل کے بارے میں بتاتے ہیں۔ ماہ ذی الحج کی جو پہلی دس راتیں ہیں۔ آج سے ہی آپ نے یہ عمل شروع کرنا ہے۔ آپ نے رات کو یہ وظیفہ کرنا ہے۔ آپ نے دس ذی الحج کی رات کو یہ عمل روزانہ کرنا ہے۔ انشاءاللہ! بہت زیادہ فائدہ ہوگا۔ آپ نے اس طرح کرنا ہے۔ کہ روزانہ رات کو بعد نماز عشاء یا بعد نماز مغرب اول و آخر گیارہ گیارہ مرتبہ درود پاک پڑھ لینا ہے۔ اور درمیان کے اندر ” سورت الفجر ” ایک مرتبہ روزانہ پڑھنی ہے۔ اور ایک رکوع کی یہ سورہ ہے۔ یہ چھوٹی سی سورہ ہے۔ آپ نے لازماً ایک مرتبہ لازمی پڑھنی ہے۔ اس کے بعد آپ نے جو بھی آپ کا مقصد ہے آپ کی جو بھی حاجت ہے اس کے لیے دعا کرنی ہے۔ یہ پہلے دس ابتدائی دنوں میں اس عمل کو جاری رکھنا ہے۔ یہ ذی الحج کی پہلی دس راتوں کا یہ وظیفہ ہے۔ یہ وظیفہ آپ کو آج سے ہی شر وع کردینا چاہیے۔ تاکہ آپ زیادہ سے زیادہ عبادات کرسکیں۔ اور ان عبادات کےصدقے اللہ تعالیٰ آپ کو ہر مصیبت، پریشانی اورمشکلات سے نجات دےگا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *