بغیر دوائی کے سپر م کی کمی کا جڑ سے خاتمہ

ایک سو ا ل پوچھا گیا ہے ؟ میرے سپرمز چالیس فیصد رہتے ہیں ۔ کسی قسم کی دوائی استعمال کرنےسے ان میں کمی آجاتی ہے۔ اور کچھ عرصہ گزرنے کے بعد پھر چالیس فیصد ایکٹوسیلز رہ جاتے ہیں؟ کوئی علا ج بتائیں ؟ اسلا م وہ بہترین ضابطہ حیات ہے۔ جس میں اللہ تعالیٰ نے ہماری کوئی بیماری

چھوڑی نہیں ہے۔ میں نے لوگوں کو بتایا کہ نماز میں جتنی بیماریوں کاعلاج اللہ نے نماز میں لیا ہے۔ شاید کوئی اور عمل ایساہو جس میں اللہ نے دیا ہو۔ یہ سپر مز کا کسی کو بھی مسئلہ ہے۔ سپرمز کی بہترین دوائی لمبا قیام ، رکوع او ر سجدہ ہے۔ لمباقیام، رکوع اور سجدہ ہے۔ اس کو سمجھنا ہے۔ قیام کہتے ہیں قائم کرنے کو۔ کھڑا کرنےکو۔ اللہ تعالیٰ ہماری نسلوں کو قیامت تک کھڑا کرنا چاہتا ہے اس کے لیے اللہ تعالیٰ نے ہمیں حکم دیا ۔ کہ قیام لمبا کرو۔ قیام لمبا کرو۔ افسوس ہم لوگوں کو آج تک یہ نماز میں پاؤں کتنے کھولنے تھے۔ اور جتنے کھولنے ہیں۔ اتنے کیوں کھولنے تھے ؟ پتہ ہی نہیں چلا۔ جتنے لوگوں کو یہ سپر مز کی کمی کامسئلہ ہے ۔ وہ چاہتا ہے کہ بغیر دوائی کے میرے سپر مز سوفیصد ایکٹو ہوں۔ سوفیصد سپرمز ایکٹو کرنے کےلیے بہترین طریقہ اپنا قیام ، رکوع اور سجدہ پرفیکٹ کرلو۔دوسرے نمبر سپر مز کو بیج لو۔ بیج کو ہمیشہ بیج تقویت دیتا ہے۔ اور دنیا میں سب سے بہترین بیج کا نام بادام ہے ، کاجو ہے، پستہ ہے، اخروٹ ہے، سفید تل ہیں، چارمغز ہیں۔ اگرآپ چاہتے ہیں کہ آپ کے سپر مز ایکٹو ہوں۔ تو بادام ، کاجو، پستہ

،اخروٹ اور چاروں مغز لو۔ اب سارے کہیں گے یہ بڑے گرم ہوتے ہیں۔ اب ان سب کو کوٹ لو ۔ مٹی کا برتن لو۔ آدھا کلو دودھ لو۔ اس میں پانچ بڑے چمچ یہ جوپاؤڈر بنایا ہے۔ اس کو ڈال دو۔ اور اس کے ساتھ پانچ کھجوریں آدھے گلاس پانی میں دو سے ڈھائی گھنٹے پہلے بھگو کررکھ دو۔ اس کو بھی گرینڈ کر لو۔ اور اس کو بھی دودھ میں ڈال دو۔ اس کو اتنا پکاؤ ، اتنا پکا ؤ کہ آدھا کلو دودھ آدھا پاؤ رہ جائے۔ مٹی کے ہانڈی میں پکانا ہے۔ اس کوٹھنڈا کرو۔ اور اس کو فریج میں رکھ دو۔ تاکہ یہ ساری رات ٹھنڈا رہے۔ اس کی پراپرٹیز بدل جائے۔ اس کے ساتھ سو گرام کلونجی اور سو گرام میتھی دانہ لو۔ کلونجی بھی بیج ہے۔ اور میتھی دانہ بھی بیج ہے۔ بیج بیجوں کو تقویت دیتا ہے۔ اور اس نیت سے لینا ہے۔ کہ پیارے پیغمبر جناب محمد ﷺنے کیا فرمایا: کلونجی وہ کالا دانہ ہے۔ جس میں م و ت کے سوا ہربیماری کی شفاء ہے۔ اور میتھی دانہ میں روایت ہے کہ اگر لوگوں کو پتہ چل جائے کہ اس کے کتنے فائدے ہیں۔ تو لوگ اس کوسونے کے عوض خریدیں۔ سوگرام کلونجی لو اور سو گرا میتھی دانہ لو۔ دونوں کو مکس کرلو۔ رات

کو چار گلاس پانی لو ۔ اور اس میں تین بڑے چمچ کلونجی اور میتھی دانہ کے ڈال دو۔ اور تین چمچ لیمن کارس شامل کرو۔ اور تین چمچ گڑ شامل کرو۔ اوراس کواتنا پکاؤ ، اتنا پکاؤ۔ کہ چار گلاس تین گلاس رہ جائے۔ اور اس کو پھر مٹی کے ہانڈی سے نکال کر مٹی کے جگ میں ڈال دو۔ ایک گلاس صبح کھانےسے آدھا گھنٹے پہلے اور دوپہر کھانےسے آدھا گھنٹے پہلے اور شام کو کھانےسے آدھا گھنٹے پہلے استعمال کریں۔ پہلے یہ پانی پیو۔ اور اس کے بعد وہ جو رات کو آپ نے دودھ میں جو سارے بیج پکائیں ہیں۔ نہار منہ اس کو کھاؤ۔ او ر رات کو ایک گلاس دودھ لو۔ اور آدھی چمچ ہلدی، آدھی چائے کی چمچ دارچینی، آدھی چائے کی چمچ سونف اور دو سبز الائچیاں اور دو لونگ اس کواتنا پکاؤ۔ یہ ایک گلاس پونا رہ جائے۔ سپر مز اس وقت آپ کے ڈیڈ ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔ جب آپ پس سیلز آنا شروع ہوتا ہے۔ اور پس سیلز اس وقت آتے ہیں۔ جب آپ کے اندر انفیکشن ہوتاہے۔ اور انفیکشن کی سب سے بہترین دوائی ہلدی اور دارچینی ہے۔ یہ جو سونف ہے ۔ آپ کے پیٹ کے جتنے مسئلے ہیں۔ اس کو ٹھیک کرے گی۔ اس دودھ کو ٹھنڈا کرو۔ اور ایک چمچ شہد ملاؤ۔ او ر سونے سے پہلے لو ۔ یہ بہترین علاج ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *