یا سمیع ، یا بصیر ذوالقعدہ کی آخری جمعرات کو

آپ کو وظیفہ کےبارے میں بتاتے ہیں کہ آپ نے وظیفہ کیسے کرنا ہے؟ آپ نے جمعرات والے دن پور ا دن آپ کے پاس ہوگا۔ چلتے پھرتے ، اٹھتے بیٹھتے ،کام کرتے ، کھانا بناتے آپ کسی کام میں بھی مصروف ہیں۔ پھر بھی آپ اس عمل کو کرسکتے ہیں۔ اگر آپ تنہائی میں بیٹھ کر اس عمل کوکرنا چاہتے ہیں ۔

پھر بھی بہتر ہے ۔ اگرآپ اس عمل کو کسی نماز کےبعد پڑھنا چاہتے ہیں۔ تویہ بھی بہتر ہے۔ اگرآپ چلتے پھرتے یہ عمل کرنا چاہتے ہیں ، تب بھی آپ یہ عمل کرسکتے ہیں۔ کرنا آپ نے یہ ہے کہ آپ نے اللہ تعالیٰ کے دو ناموں کا ورد کرنا ہے۔ ” یا سمیع ، یابصیر” ان دواسمائے اعظم کو اکٹھا پڑھ کر ایک تصور کرنا ہے۔ اور ایک سو مرتبہ ان دونوں ناموں کو پڑھنا ہے۔ اول وآخر گیارہ گیارہ یا سات سات مرتبہ درود ابراہیمی لازمی پڑھنا ہے۔ یا درکھیں! جس دعا کے اول وآخر یا جس وظیفہ کے اول آخر درود پاک پڑھا جاتا ہے۔ وہ دعا ضرور قبول ہوتی ہے۔اور اس وظیفے کی طاقت اور زیادہ

بڑھ جاتی ہے۔ درودا براہیمی کی اتنی زیادہ فضیلت ہے کہ اس درود کو جو بندہ پڑھ لیتا ہے اس کی دعا براہ راست عرش معلیٰ پر جاتی ہے۔ اور فرشتے اس بندے کی دعا پر “آمین ” کہتےہیں۔ اور اللہ تعالیٰ اسی بات پر خوش ہو کر بندے کی دعا کو قبول کرتا ہے۔ کہ میرے بندے نے مجھے میرے ناموں سے پکا رکر مانگا ہےاوراسی کےساتھ میرے محبوب محمد ﷺ پر درود سلام بھیج کر مجھ سے مانگا ہے ۔ اسی خوشی پر اللہ تعالیٰ بندے کو عطا کردیتا ہے۔ اللہ تعالیٰ کے جو یہ دو نام ہیں۔ ” یاسمیع ، یابصیر” میں “یا سمیع” کے معنی ہیں۔ اے سننے والے۔ اور ” یا بصیر ” کےمعنی ہیں اے دیکھنے والے ۔ اللہ تعالیٰ سمیع بھی ہے بصیر بھی ہے۔ غفور بھی ہے ۔ رحیم بھی ہے ۔کریم بھی ہے۔ وہاب بھی ہے۔ رزاق بھی ہے۔ غنی بھی ہے۔ آپ اللہ

تعالیٰ سے جو مانگیں گے ۔ آپ کو ملےگا۔ رزق مانگیں گے تو رزق ملے گا۔ دولت مانگیں گے تو دولت ملے گی۔ عزت مانگیں گے تو عزت ملے گی۔ کا میابیاں مانگیں گے تو کا میابیاں آپ کا مقدر بن جائے گی۔ آپ نے اس عمل کو جمعرات والے دن کرناہے۔ اوراس عمل کو جو بندہ اپنی زندگی کا معمول بنالے گا۔ وہ ان تمام فوائد سے مستفید ہوگا ۔ جن کا آپ کو بتایا گیا ہے۔ ہفتے کے آٹھ دنوں میں سے صرف ایک ہی دن کاعمل ہے۔ اس کے فائدے دیکھ لیں۔ کتنے ہی زیادہ ہیں۔ کچھ ہی دن آپ نے اس عمل کوکرنا ہے۔ چند ہی جمعرات ہی آپ نے اس عمل کو کرنا ہے۔ آپ اپنی حاجات کو پورا ہوتے اپنی آنکھوں سے دیکھیں گے۔ دعاؤں کو قبول ہوتے آپ اپنی آنکھوں سے دیکھیں گے۔ اللہ تعالیٰ آپ کے تمام مسائل کو حل کرے گا ۔ پریشانیوں کو ختم کرے گا۔ مصیبتوں سے آپ کو نجات ملےگی۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *