جوڑوں کے درد کا شرطیہ علاج ہڈیوں کی کمزوری ،جوڑوں کی سوزش پٹھوں کا کھچاؤ

آج ہم جس موضوع پر بات کرنے لگے ہیں وہ ہے جوڑوں کادرد کیوں ہوتا ہے اس کے ہونے کی وجوہات کیا ہے ہیں آج ہم اس کے علاج پر بات کریں گے اور آپ کو بہت اچھی میڈیسن بتائیں جس کے استعمال سے آپ کے جوڑوں کا درد ہے یا جوڑ اکڑ گئے یا اُٹھنے بیٹھنے میں مسئلہ آرہا ہے تو اس سے

انشاء اللہ حل ہوجائیگا ۔ جوڑ دو قسم کے ہوتے متحرک اور غیر متحرک جو متحرک ہوتے ہیں جیسا کہ کہنی کا جوڑ انگلیوں کا جوڑ یا گھٹنے کا جوڑ وغیرہ کچھ غیر متحرک جوڑ ہوتے ہیں جیسے سرکی ہڈی کا جوڑ یہ غیر متحرک جوڑ ہوتے ہیں جو حرکت نہیں کرتے ۔ کونسی ایسی وجوہات ہوتی ہیں جن کیوجہ سے جوڑوں کے اندر درد ہونا شروع ہوجاتا ہے اس بڑی وجہ یہ ہے کہ جو لوگ سرد پانی میں اچانک نہالیتے ہیں سردی لگنے کیوجہ یا بادی چیزوں کا استعمال کرتے ہیں جیسے مٹر ہوگئے آلو ہوگئے چاول ہوگئے یا بڑا گ وشت ہوگیا یہ سب چیزیں بادی ہوتی ہیں جو لوگ بادی چیزوں کا استعمال کرتے ہیں تو ان کے اندر بلغمی رطوبات کی زیادہ ہوجاتی ہے ان کے خ ون کے اندر وہ جاکر جوڑ ہوتے ان میں جمع ہوجاتی ہے جس کیوجہ سے جوڑ

ہوتے ہیں ان کی ری پیدا ہونا شروع ہوجاتی ہے جس کیوجہ سے جوڑوں کے اندر سوجن آجاتی ہے ان کے اندر بہت زیادہ انفیکشن ہوجاتا ہے ان میں بہت زیادہ درد ہوتا ہے اتنا شدید درد ہوتا ہے کہ بہت زیادہ اذیت ہوتی ہے ۔ واش روم نہیں بیٹھ سکتے جوڑ اکڑ جاتے ہیں۔ اس کی دوسری وجہ ہے وہ خ ون کے اندر یورک ایسڈ کا بڑھ جانا ہے ۔ جب یورک ایسڈ کی تعداد بہت زیادہ ہوجاتی ہے تو گردے فاسد مادوں پیشاب کی شکل میں جسم سے باہر نکالتے ہیں اتنے زیاد ہ بڑھے ہوئے یورک ایسڈ کو باہر نہیں نکال پاتے پوری طرح سے تو جو باقی مادہ یورک ایسڈ ہوتا ہے یہ خ ون میں شامل ہوکر جو جوائنٹ ہوتے ہیں ان میں جمع ہوکر جس کیوجہ سے جو جوڑ ہیں ان میں درد پیدا کرتا جو لوگ سگ ریٹ نوشی کا زیادہ استعمال کرتے ہیں یا شراب نوشی کا استعمال کرتے جن لوگوں کے اندر خ ون کی کمی ہوجاتی ہے یا کسی چوٹ لگنے کیوجہ سے بھی جوڑوں کے اندر درد ہونا شروع ہوجاتا ہے ۔

اس میں بلیڈ یوریا خ ون کے اندر بڑھنے کیوجہ سے خ ون کے اندر بلغمی زیادتی کیوجہ سے وائرل انفیکشن کیوجہ سے جوڑوں کے درد کے مسئلے پید اہوجاتے ہیں۔ اس کے علاج میں جو ہومیو پیتھک کی میڈیسن بتائیں گے اس کے استعمال سے آپ کے جوڑوں کے اندر دردوں کا مسئلہ حل ہوجائیگا اس میں پہلی میڈیسن وہ رکس ٹاکس 30ہے آپ بیٹھے ہوئے ہیں چلنے لگے ہیں اچانک جوڑوں کے اندر آپ کو درد ہورہا ہے اور آہستہ آہستہ چلنے کے بعد درد بلکل ختم ہوجائیگا ۔اس کیلئے میڈیسن بہت مفید ہے ۔اس کے ساتھ دوسری میڈیسن لینی ہے وہ برائی یونیا30ہے ۔ اگر چلنے پھرنے میں گھٹنوں میں درد ہوتا یا فولڈ کرنے پر گھوٹنوں میں شدید درد ہوتا ہے اس کیلئے بہت اچھی ہے ۔ تیسری میڈیس لیڈم پال 30ہے یہ میڈیسن گھٹنوں پر سوجن آجاتی ہے اور درد ہوتی ہے تو اس کیلئے یہ بہت اچھی میڈیسن ہے ۔چاروں میڈیسن کے دو دو قطرے آدھا گھونٹ پانی کے اندر ڈال کر دن میں تین دفعہ استعمال کرنا ہے آپ نے ایک سے ڈیڑھ ماہ تک استعمال کرنا ہے اگر خاطر خواہ فائدہ ہوجائیگا ۔ آپ نے اپنی ٹھنڈی چیزوں کا استعمال ،بڑا گ وشت ،مٹر پنیر وغیرہ کا استعمال بہت کم کردیں پانی زیادہ پینا ہے اور گرم چیزوں کا استعمال اس کے ساتھ کرسکتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.