بنی اسرائیل کاایک عبادت گزار کسان کی خوبصورت بیوی اور سرکش آدمی ۔۔۔۔

بنی اسرائیل کے ایک عبادت گزارکا قصہ ہے کہ وہ کھیتوں میں کام کرتا تھا۔ اس کی بیوی بنی اسرائیل کی خوبصورت ترین خواتین میں سے تھی۔ بنی اسرائیل کے ایک سرکش آدمی کو اس کے حسن وجمال کا پتہ چلا۔ اس نے ایک بوڑھی کٹنی کو اس کے پاس یہ کہہ کر بھیجا۔ کہ اس عورت کو ورغلانا۔ اور کہنا

کہ کیا تو اس جیسے کسانوں کے پاس رہ سکتی ہے۔ اس کے بجائے میرے پاس بہت ہو تو میں تجھے سونے کے زیورات میں لاد دوں گا۔ اور ریشم کے پوشاک پہنا دوں گا۔ اور خدمت کےلیے غلا م اور لونڈیاں مقرر کر دیتا ۔ جب یہ باتیں کٹنی کی زبانی اس عورت کے کانوں میں پہنچی۔ اور رات کوشوہر گھر آیا تو اس نے نقشہ بدلا ہوا پایا۔ اب تک بیوی اس کے سامنے کھانے لگا دیتی تھی۔ آج اس نے ایسا نہیں کیا۔ پہلے اس کا بستر لگا دیتی تھی آج بستر بھی نہیں لگایا۔ شوہر نے جو یہ دیکھا تو کہا ارے پگلی ! یہ کیا طریقہ ہے؟ اب تک تو میں نے ایسا نہیں دیکھا۔ اس نے کہا کہ صورت تووہی ہے۔ تو

شوہر نے کہا : اچھا تو میں طلاق دے دوں۔ تو اس نے کہا :ہاں!!تو شوہر نے اسی وقت طلاق دے دی۔ تو اس عورت نے اسی وقت اس سرکش سے نکاح کر لیا۔ جب وہ رات میں تخلیاں میں اس سے ملنے لگا۔ اور پردے گرا دیے۔ تو مرد اور عورت دونوں اندھے ہوگئے۔ مرد نے ہاتھ بڑھا کر اسے چھونا چاہا تو اس کا ہاتھ سوکھ گیا۔ عورت نے چھونے کےلیے ہاتھ بڑھایا تو اس کا ہاتھ بھی سوکھ کر کانٹا ہوگیا ۔ دونوں گونگے اور بہر ے ہوگئے۔ اور ان کی شہوت صلب ہوگئی۔ صبح جب پردے اٹھائےگئے تو لوگوں نےدیکھا کہ میاں بیوی گونگے ، اندھے اور بہرے بنے بیٹھیں ہیں۔ تب ان کا قصہ بنی اسرائیل کے موجودہ پیغمبر کو معلوم ہوا تو آپؑ نے خداوند ِ قدوس سے حقیقت معلو م کرنا چاہی۔ تو اللہ پا ک نے فرمایا: کہ میں ان دونوں کو ہرگز معاف نہیں کروں گا۔ دونوں یہ سمجھتے ہیں کہ کسان کے ساتھ انہوں نے جو کچھ بھی کیا مجھے اس کا علم نہیں ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.