وہ گ ن ا ہ جن سے اللہ تعالیٰ سخت نفرت کرتا ہے وہ عورت جس پر اللہ تعالیٰ کی سخت لعنت ہوتی ہے

ہمارے معاشرے میں بہت سارے گ ن ا ہ عام ہوچکے ہیں جن کے بارے میں ہمیں سوچنے کی ضرورت ہے تاکہ ہم اپنے معاشرے اور اپنی نسلوں کو ان گ۔ناہوں سے بچا سکیں اور یہ ہر مسلمان کا فرض بھی ہے یہ تب ہی ممکن ہے کہ جب ہم ان گ۔ناہوں کے بارے میں کھل کر بیا ن کریں۔ اگر ہم ان گ۔ناہوں

دکھانے اور بات کرنے والوں کو تنقید کا نشانہ بنائیں گے ۔ تو وہ دن دور نہیں جب یہ گ ن ا ہ ہمارے گھروں میں عام ہوجائیں گے ۔ آج ہم عورتوں کے ایسے کچھ گن اہوں کے بار ے میں بات کرنے جارہے ہیں جس کیوجہ سے عورتوں پر اللہ تعالیٰ کی لعنت برستی ہے ۔ اللہ تعالیٰ نے عورت کو مرد کیلئے پیدا کیا ہے پھر دونوں کیلئے ایک ضابطہ مقرر فرمایا اور مرد عورت کے ان کے مقام کے بارے میں واضح بتا دیا ہے کہ کہتے ہیں اگر انسان اپنے مقصد اصلی پر قائم رہے تو وہ فرشتوں سے اعلیٰ ہے ۔لیکن جب وہ اپنے مقصد اصلی کو بھول کر نفس وشیطان کی پیروی کرے تو وہ جانوروں سے بدتر ہے ۔ عورت کیلئے بھی اللہ تعالیٰ نے ضابطہ مقرر فرمایا ہے جب عورت اس ضابطے سے ہٹ کر زندگی گزارتی ہے تو وہ فتنوں کا سبب بنتی ہے ۔ایسی عورتوں کو شیطان نے اپنا دوست بتایا ہے ایسی عورت جو خاوند کی اجازت کے بغیر گھر سے باہر جاتی ہے تو حدیث میں آتا ہے ایسی عورتوں پر اس وقت تک لعنت کرتے رہت ےہیں جب تک وہ گھر واپس نہیں آتی ۔ ہماری سب بہنوں سے گذارش ہے جب بھی گھر سے باہر جائیں تو خاوند کی

اجازت کے ساتھ جائیں۔ جو عورت شادی شدہ ہونے کے بعد بھی غیر مردوں سے حرام تعلق بنائے ایسی عورت کیلئے سخت ترین عذاب بتایا گیا ہے ۔ یہ گ ن ا ہ بھی ہمارے معاشرے میں عام ہوچکا ہے ۔ وہ عورت جس کا خاوند اسے بستر پر بلائے وہ بنا کسی شرعی عذر کے انکار کردے ایسی عورت پر پوری رات اللہ تعالیٰ کے فرشتوں کی لعنت برستی رہتی ہے اکثر خواتین خاوند سے کسی بات پر ناراض ہوجاتی ہیں ۔پھر وہ لمبے عرصے تک خاوند کو اپنے قریب نہیں آنے دیتیں یہ بہت بڑا سخت گ ن ا ہ ہے ۔ عورتوں کو اس بارے میں اللہ تعالیٰ سے ڈرنا چاہیے کیونکہ ایسا کرنا عورت کیلئے اللہ تعالیٰ کی ناراضگی کا سبب ہے اور شیطان کے پسندیدہ کاموں میں سے ہے کہ میاں بیوی میں نفرت پیدا کرنا اس وجہ سے بہت سارے فساد پید ا ہوتے ہیں۔ ایک نیک اور اچھی بیوی کی سب سے بڑی صفت یہ ہے اگر خاوند اچھا نہ بھی ہو تو اس کی فرمانبرداری میں کوئی کثر اٹھا نہ رکھے جو عورت اللہ کی رضا کیلئے اپنے خاوند کی اطاعت کرتی ہے اس کی ہر جائز حاجت کو پورا کرتی ہے ۔ اس کیلئے آخرت میں بڑا ہی عظیم اجروثواب اور جنت کا وعدہ ہے ۔ جو عورت نماز بھی پڑھتی روزے بھی رکھتی بداخلاق ہو ایسی عورت کے بارے میں فرمایا اسے روزے اور نماز کا کوئی فائدہ نہیں اور وہ اہل جہنم میں سے ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.