السی کے بیج کھانے والو یہ بھی دیکھ لو

السی کے بیج جنہیں ہم فلیکس سیڈز بھی کہتے ہیں۔ السی کے بیجوں میں بھرپور اومیگا تھری ہمارے صحت کےلیے بہت زیادہ ضروری ہے۔ کیونکہ ہمارا دماغ نوے فیصد تک صرف اومیگا تھری سے ہی بنا ہوتا ہے۔ ہماری دماغی صحت اور ہماری صحت کے لیے اومیگا تھری ایک بہت ہی ضروری چیز ہے۔ اس کے

علاوہ السی کےبیجوں میں فائبرز اور دوسرے کمپاؤنڈ ز ہمارے بھرے ہوئے وزن کو کم کرنے میں بہت مدد کرتے ہیں۔ بھوک کم لگتی ہے اور ہم کم کھاتے ہیں اور یہ بیج عورتوں کی بیماریوں میں پی ۔ سی ۔ او میں بہت زیادہ فائدہ کرتا ہے۔ ہمارادل محفوظ رہتا ہے۔ ہم دل کی بیماریوں سے بچے رہتے ہیں۔ ہمارا بلڈ پریشر کنٹرول میں رہتا ہے۔ ہمارے جسم میں ایچ۔ڈی ۔ایل کولیسٹرول میں اضافہ اور ایل ۔ڈی ۔ایل کو لیسٹرول میں کمی ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ السی کے بیج ہمارے بالوں کی صحت کے لیے بہت فائدہ مند ہوتے ہیں۔ ٹوٹتے ہوئے کمزور بالوں کو گرنےسے روکنے اور بالوں کی چمک میں اضافہ کرتے ہیں۔ بالوں کو مضبوط کرتے ہیں۔ السی کھانے کا سب سے بہترین اور آسان طریقہ یہ ہے کہ آپ السی کے بیجوں کو اچھی طرح سے صا ف کرکے توے یا فرائی پین میں ہلکا ہلکا سا روسٹ کرلیں۔ اوراس کو موٹا موٹا کوٹ لیں۔ صرف ایک چمچ روزانہ کھایا جاسکتاہے۔ اس کے علاوہ آپ السی کےلڈو بھی بنا کرکھا سکتے ہیں۔ حاملہ اور دودھ پلانے والی خواتین کھانے سے اجتناب کریں ۔ یا اپنے ڈاکٹر سے مشورہ ضرور کرلیں۔ السی کے بیجوں میں اینٹی ایجنگ خصوصیات ہوتی ہیں یہ ہماری جلد کو چ کنا چمکدار اور ملائم رکھتے ہیں۔خواتین کی بہت ساری سکن پراڈکٹس میں السی کے بیجوں کا ہی استعمال کیاجاتا ہے اسی لئے السی کے بیجوں کا استعمال کرنے والی خواتین کے چہرے پر جھریاں نہیں ہوتیں اور وہ حسین خوبصورت اور جوان نظر آنے لگتی ہیں اور ہمیشہ اپنی عمر سے کم نظر آتی ہیں السی کے بیجوں میں بہت سارے نیوٹرینٹس اور منرلز کے ساتھ ساتھ اومیگا 3 فیٹی ایسڈز

ہونے کی وجہ سے یہ نہ صرف خواتین کی صحت کے لئے اچھے ہوتے ہیں بلکہ یہ خواتین اور مردوں میں ہونے والے گنجے پن کو بھی دور کرتے ہیں بالوں کی کمزوری دور ہوتی ہے بال ٹوٹنے سے رک جاتے ہیں اور بالوں کو پوری غذائیت ملنے کی وجہ سے وہ گہرے اور لمبے بھی ہوجاتے ہیں السی کے بیجوں کی جو سب سے بڑی خصوصیت ہے وہ ہے۔اومیگا3 کا حصول السی کے بیجوں میں مچھلی سے زیادہ اومیگا 3 موجود ہوتا ہے یعنی آپ اسے مچھلی کا نعم البدل بھی کہہ سکتے ہیں ۔السی کے بیجوں کو کوشش کیجئے کہ ثابت نہ کھائیے کیونکہ السی کا بیج ثابت کھانے سے عموما ہضم ہوئے بغیر ہی جسم سے خارج ہوجاتا ہے لہذا کوشش کیجئے کہ اس کا پاؤڈر ہی استعمال کیجئے اس کا پاؤڈر بنانے کا بہتری طریقہ یہ ہے کہ السی کے بیجوں کو اچھی طرح صاف کرنے کے بعد کسی فائنگ پین میں ڈال کر اچھے سے روسٹ کر لیں۔تا کہ ان کی نمی کم ہوجائے اور پھر کسی گرائینڈر میں ڈال کر اس کا پاؤڈر بنا لیجئے اسکو ایک ہفتے سے زائد نہ رکھیں کوشش کیجئے کہ دو سے تین دن کے بعد تازہ بنالیجئے جو لوگ اپنا وزن کم کرنا چاہتے ہیں یا دوسری بیماریوں کے لئے اس کا استعمال کرنا چاہتے ہیں وہ صبح نہار منہ اور شام کو سورج غروب ہونے سے پہلے اسے استعمال کریں تا کہ اس کے ہضم ہونے کے ایک سے دو گھنٹے کے بعد کھانا کھاسکیں جن لوگوں کو نیند کی کمی کاسامنا ہے۔ تو وہ لوگ رات کو سوتے وقت کسی بھی چیز دودھ یا جوس یاپانی کے ساتھ اسے کھا سکتے ہیں ۔حاملہ عورتیں اور گرم مزاج والے لوگ بلڈ شوگر کے مریض جو خواتین برتھ کنٹرول کی گولیاں استعمال کرتی ہیں یا بچہ پیداکرنے کی خواہش رکھتی ہوں ٹین ایجر لڑکیاں کسی بیماری کے علاج کے لئے ادویات استعمال کررہے ہوں دودھ پلانے والی خواتین یا جن لوگوں کو گرم چیزوں سے الرجی ہو ایسے تمام افراد اس کے استعمال سے پہلے اپنے معالج سے ضرور مشورہ کرلیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *