روزانہ اجوائن کا پانی بنا کر پینے سے جسم میں حیرت انگیز تبدیلی۔

نہار منہ اجوائن قہوہ پینے کے ایک نہیں 5 فوائد جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے اور روزانہ اس کا استعمال کریں گے۔اجوائن جسے قدرتی اینٹی آکسیڈنٹ بھی کہا جاتا ہے یہ کاربوہائیڈریٹس، فیٹ، پروٹین، فائبر، موئسچر، منرلز، کیلشیم، فاسفورس، آئرن، کوبالٹ، کوپر، آئیوڈین، میگنیشیم، تھائیمائین اور ریبو فلاون سے بھرپور ہوتا ہے۔

اس سے متعلق ماہرین غذائیت کہتے ہیں کہ: ” اجوائن چھوٹے بیج ضرور ہیں لیکن یہ صحت کے لیے ایک بھر پور خزانہ ہے جو آپ کو ہر طرح کے استعمال میں فائدہ پہنچاتے ہیں”۔ ماہرین کے مطابق اجوائن کا قہوہ صبح نہارمنہ پینا ہمارے لئے بہت فائدہ مند ہے تو چلیں آپ بھی جانیں کہ وہ کون سے ایسے فوائد ہیں جو اس کو صبح کے وقت پینے سے حاصل ہوتے ہیں جرنل آف انفلامیشن کی ہیلتھ رپورٹ کے مطابق جوڑوں میں درد سوجن کی وجہ سے بھی ہوسکتا ہے۔ اور اجوئن میں اینٹی انفلامینٹری خصوصیات پائی جاتی ہیں جو جوڑوں میں درد کی شکایت کے لیے مفید ہے ۔اس قہوے کا استعمال سانس کی نالی، پھیپڑوں، ڈسٹ الرجی اور دمے کے مریضوں کے لیے بھی نہایت مفید ہے اجوائن قہوہ کھانا جلدی ہضم کرنے، بدہضمی، پیٹ کے کیڑوں اور دست وغیرہ میں نہایت مفید ثابت ہوتا ہے اجوائن اینٹی سیپٹک، اینٹی مائیکروبیل اور اینٹی پیرا سائیٹک ہے جو ہمیں ہر قسم کے انفیکشن اور وائرل بیماری سے محفوظ رہنے میں مدد دیتی ہے۔یہ صبح کے وقت پینا اس لئے مفید ہے کیونکہ قوت مدافعت کی کارکاردگی بڑھانے میں دد دیتا ہے ۔یہ کولیسٹرول کومتوازن رکھنے، ذیابطیس، دل کا عارضہ اور موٹاپے کو کنٹرول کرنے میں مدد دیتا ہے۔ ایک کپ پانی کو ابالیں اور اس میں تھوڑی سی اجوائن ڈال کر ابالیں اس

کو چھان لیں پھر اس میں لیموں کا رس ، سیب کا سرکہ ، شہد، ہلدی اور کالا نمک شامل کرکے پی لیں۔گرم مصالحے میں شمار کی جانے والی اجوائن کے استعمال کے بے شمار فوائد ہیں، اسے نا صرف کھانوں میں استعمال کیا جا سکتا ہے بلکہ اس کا قہوہ بھی بنا کر پیا جا سکتا ہے۔صدیوں سے استعمال
کی جانے والی اجوائن مجموعی صحت پر مثبت طریقے سے اثر انداز ہوتی ہے، اسے قدرتی اینٹی آکسیڈنٹ بھی کہا جاتا ہے ، نہار منہ اس کے قہوے کے استعمال سے وزن میں کمی سمیت جلد صاف ہوتی ہے اور جسم سے مضر صحت مادوں کا صفایا بھی ہوتا ہے۔ جس کے نتیجے میں کئی وائرل بیماروں سے بچنے میں مدد ملتی ہے ۔اجوائن ایک طبی مسالہ ہے جس میں کاربوہائیڈریٹس ، فیٹ ، پروٹین ، فائبر، موئسچر ، منرلز ، کیلشیم ، فاسفورس، آئرن ، کوبالٹ ، کوپر ، آئیوڈین ، میگنیشیم ، تھائیمائین اور ریبو فلاون پایا جاتا ہے، اسی لیے ماہرین غذائیت کا کہنا ہے کہ چھوٹے بیجوں کی شکل میں یہ ایک صحت کے لیے بھر پور خزانہ ہے جوائن کا استعمال سانس کی نالی، پھیپڑوں کی صحت کے لیے بہتر ثابت ہوتی ہے، جن افراد کو دھول مٹی سے الرجی ہوتی ہے وہ اس کے قہوے سے مستفید ہو سکتے ہیں جبکہ اس کا استعمال دمے کے مریضوں کے لیے بھی نہایت مفید ثابت ہوتا ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.