گلے کی خرابی، سانس کی نالی اور پھیپھڑوں کے انفیکشن کا علاج۔

گلے کی خرابی، حلق کی سوزش ، سانس کی نالی میں کسی قسم کے انفیکشن کا جنم لینا یا پھیپھڑوں کی خرابی، کھانسی کا سبب بنتی ہے کھانسی کا موثر علاج نہ ہونے کی صورت میں یہ خطرناک شکل اختیار کر سکتی ہے کھانسی چند روزہ ہو یا کہنہ، برونگا ئیٹس کی شکل اختیار کی چکی ہو یا خشک اور شدید ہو اس

کا تعلق نظام ِ تنفس کی گو نا گوں بیماریوں سے ہو تا ہے ان کے طبی علاج کے ساتھ ساتھ چند سادہ اور گھر یلو نسخے بھی بہت کا ر آمد ثابت ہو تے ہیں شدید کھانسی عمو ماً لگ بھگ تین ہفتے رہتی ہے کھانسی کی چند دیگر اقسام ٹھیک ہونے میں کبھی کبھی کافی وقت لے لیتی ہیں تاہم کھانسی کسی بھی نوعیت کی ہواس کا تعلق نظام تنفس میں پیدا ہونے والے کسی نقص سے ضرور ہو تا ہے۔ کھانسی کا موثر علاج نہ ہونے کی صورت میں یہ خطر ناک شکل اختیار کر سکتی ہے پھیپھڑوں کی مخصوص نالیوں میں مسلسل نقص رہنے کی صورت میں برو نکا ئیٹس کا عارضہ جنم لیتا ہے اور ابتدائی مرحلے میں مریض کو خشک کھانسی کا سامنا ہو تا ہے اگر اس مرحلے پر صحیح علاج نہ ہو سکے تو پھیپھڑوں کی نالیوں میں بلغم جمع ہو نا شروع ہو جا تا ہے اس طرح پھیپھڑے اپنا نارمل فنکشن انجام نہیں دے پاتے۔ موسم اور احتیاط: سانس کی تکلیف یا دائمی کھانسی میں مبتلا مریضوں کو سردیوں اور بہار کے موسم کے آغاز سے پہلے ہی بہت محتاط ہو جا نا چاہیے کیونکہ پھیپھروں کی نا لیوں میں جمع ہونے والی بلغم نزلے زکام کے جراثیموں کی آماجگاہ بن جا تی ہے۔

جہاں وہ تیزی سے نشو و نما پا تے ہیں یہ بلغم کبھی کبھی شدید کھانسی کی صورت میں بھی با ہر نہیں نکلتی نالیوں کو جکڑے رکھتی ہے اور اکثر پھیپھڑو ں کے مہلک انفیکشن کا سبب بنتی ہے۔ ہوا میں نمی کا مناسب تناسب سانس کی بیماریوں اور کھانسی وغیرہ سے بچنے کے لیے نہایت ضروری ہے اس سلسلے میں سونے کے کمرے میں ہوا میں نمی کا تناسب پنتالیس سے ساٹھ فیصد کے درمیان ہو نا چاہیے جڑی بوٹیوں سے تیار کر دہ چائے اور دائمی کھانسی کے علاج اور پھیپھڑوں کی نالیوں کو کھولنے کے عمل میں بہت مفید ثابت ہو تی ہے۔ کھانسی کا زور توڑنے کے لیے حلق کو خشکی سے بچا نا نہایت ضرور ہو تا ہے اس لیے کھانسی کی شدت سے بچنے اور گلے کی سوزش دور کرنے کے لیے جڑی بوٹیوں سے تیار کر دہ گولیاں چوستے رہنا چاہیے سینے پر ہنس کی چربی ملنے سے کھانسی میں آرام آتا ہے اور اس کی گرمی پھیپھڑوں کی نالیوں میں جمع بلغم کو صاف کرنے میں بھی بہت مدد دیتی ہے لیموں کے عرق سے تو لیے کو تر کر کے سینے کو لپیٹنے سے بھی کھانسی میں آرام آ تا ہے۔ گرم دودھ میں شہد ملا کر پینے سے پھیپھڑوں سے بلغم صاف ہو جا تا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.