ماہ شوال میں بس ایک سورت پڑھ لیں

وظیفہ بنیادی طور پر انحصارکرے گا ایک سورت مبارکہ پر جو شوال کے اس بابرکت مہینے میں پڑ ھیں تو اس سے آپ کو کیا فائدہ حاصل ہوتا ہے ۔ یہ آپ کو بتاتے ہیں۔ شوال کے مہینے کی برکت سے بات کرلی جائے اگر شوال کے مہینے کے چھ روزے رکھ لیے جائیں ۔ وہ اللہ کے نزدیک بڑا ہی بابرکت عمل ہے

شوا ل کے مہینے کے اندر جیسا کہ آپ کو معلوم ہے کہ اسلامی سال میں جب عید الفطر آتی ہے جو شوال ہے اس کی یکم وہ عید کا پہلا دن ہوتا ہے وہ عید کا روز ہوتا ہے اور شوال کے پہلے روز آپ روزہ نہیں رکھ سکتے ۔ کیونکہ اس دن عید ہوتی ہے ۔ ا س لیے عید کے دن روزہ رکھنے کی ممانعیت کی گئی ہے۔ تو وہ شوال کے دن یعنی کہ شوال کا پہلا دن جو ہے اس دن آپ روزہ نہیں رکھ سکتے ۔ لیکن اس کے بعد اگر آپ چھ روزے رکھ لیں۔ تو یہ گویا یوں ہوتا ہے جیسے آپ نے پورے سال کے روزے رکھے ہیں۔ آپ کے ذہن میں سوال آتا ہے کہ پورے سال کے روزوں کے برابر ثواب کیسے ہوگیا؟ یہ ہوتا کچھ یوں ہےکہ آپ جب شوال کے چھ روزے رکھتے ہیں جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ رمضان میں ہرایک عمل کا جو ثواب ہے وہ کتنے گنا بڑھ جاتا ہے۔ وہ دس گنا بڑھ جاتا ہے۔ اگر آپ نے رمضان کے پورے روزے رکھے ہیں۔ تو اس کا مطلب ہے کہ اس کا ثواب دس گنا بڑھ گیا ہے ۔ ایک مہینے کا ثواب دس مہینوں کے برابر ہوگیا ہے۔

تو پیچھے دو مہینے بچ گئے ۔ اب ان دو مہینوں کا جو ثواب ہے وہ شوال کے چھ روزے رکھنے کا مطلب ہے کہ آپ نے دو مہینے روزے رکھے۔ گویا اس سے پتہ یہ چلا کہ رمضان کے پورے مہینے کے روزے رکھنا دس مہینوں کےبرابر اور شوال کے چھ روزے رکھنادومہینے کے برابر۔ یہ کل ملا کر کتنے مہینے بنے ۔ دس مہینے ۔ اوریہ دس مہینے کا بالکل ایکٹو جو ثواب ہے وہ آپ کو عطاکیا جاتاہے۔ تو شوال کےاندر آپ نے وظیفہ کرنا ہے۔آپ کووظیفہ بتادیتے ہیں۔ آپ نے کرنا کچھ یوں ہے کہ شوال کے دنوں میں آپ جب نما ز اداکریں ۔ اس کے بعد اسی جگہ پر بیٹھ کر کرناہے ۔ کوشش کریں کہ صبح کی نماز فجر کے بعد کریں۔ یا عشاء کی نماز کے بعد رات کا پہر ہوتا ہے اللہ تعالیٰ کی ذات اپنے بندے کے نہایت قریب ہوتی ہے۔ توآ پ نے اپنے گریبان میں جھانک کر یہ کرنا ہے آپ نے کیا پڑھنا ہے ؟ آپ نے گیارہ رمرتبہ درود ابراہیمی پڑھناہے۔پھر اس کے بعد آپ نے دس مرتبہ ” سورت اخلاص” یعنی آپ نے اللہ رب العز ت کی ذات اقدس کےحوالے آپ نے اللہ کی ذات کی پاکی بیان کرتے ہوئے یہ زبردست اور نہایت اعلی ٰ قسم کا آپ نے وظیفہ پڑھناہے۔ آپ نے دس مرتبہ “سورت اخلاص” کی تلاوت کرنی ہے۔ اس کے بعد آخر میں دوبارہ گیارہ مرتبہ درود پاک پڑھ لیناہے۔

پھر اس کے بعد آپ نے اللہ رب العزت کے حضور سرسجدے میں رکھ گڑ گڑ ا کردعا کرنی ہے اے میرے خالق! تجھے تیری پاکی کا واسطہ ، رحمتوں کا، فضیلتوں کا، تیری عظمتوں کا واسطہ میرے دل کی ہر حاجت کو پورا فرما۔ میں جس بھی پریشانی میں مبتلا ہوں ۔ اس کو پور ا فرما۔ جب آپ نے یہ عمل کرنا ہے کہ اس عقیدے کےساتھ یقین کےساتھ اور اس اطمینان کے ساتھ کہ اللہ کی ذات آپ کی اس عبادت کو سن رہی ہے۔ اور اس سے آپ کو فائدہ ہورہا ہے۔ جب آپ یوں دعاکریں گے تو دعا قبول ہوگی ۔ ا س کا فائدہ جو ہے وہ بھی بڑھ چڑھ کر آپ کے سامنے آئے گا۔ انشاءاللہ! اللہ کی رحمت سے آپ کی زندگی میں کسی قسم کا اگر کوئی بھی معاملہ خراب تھا انشاءاللہ! وہ ٹھیک ہوجائےگا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.