سورت الملک کا خاص وظیفہ

آج کو جو ہمارا وظیف ہے وہ ” سورت الملک ” ہے یہ وظیفہ ہر قسم کی پریشانی سے نجات حاصل کرنے کےلیے نہایت ہی مجرب وظیفہ ہے۔ اگرآپ اس وظیفے کو کرلیں گے ۔ آپ کی زندگی میں کیسے سکون اور اطمینان برپا ہوتا ہے برکت حاصل ہوتی ہے۔ آپ کی تمام جائز حاجات پوری ہوں گی۔ آپ نے وظیفہ کس طرح کرنا ہے؟

اس بارے میں آپ کو تفصیل سے بتائیں گے ۔ کیونکہ یہ وظیفہ سورت الملک کے ساتھ ہے۔ اس لیے سب سے پہلے ہم کچھ بات کرلیتے ہیں۔ سورت الملک کی فضیلت کے بارے میں بتاتے ہیں۔ سورت الملک کی فضیلت اور خصوصیات میں بہت سی احادیث بیان ہوئی ہیں۔ حضرت سیدنا ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے۔ کہ حضور اکرم ﷺ نے فرمایا: بےشک قرآن میں تیس آیتوں پر مشتمل ایک سورت ہے۔ جواپنے قاری قرات کرنے والے کے لیے شفاعت کرتی رہے گی۔ یہاں تک کہ اس کی مغفرت کر دی جائے گی۔ اور یہ ” تبار ک الذی بیدہ الملک ” ہے سورت الملک کے فائدے بے شمار ہیں۔ اس سورت مبارکہ کے برابر ع ذاب قب ر سے بچانے والی اور کوئی چیز نہیں ۔ اگر اس کے پڑھنے والوں کے پاس ع ذاب کے فرشتے آناچاہیں تو یہ ان کو روکتی ہے۔ وہ دوسری طرف سے آنا چاہیں تو ادھر سے حائل ہوجاتی ہے۔ اور فرماتی ہے کہ اس کے پاس نہ آؤ۔ یہ مجھے پڑھتا تھا۔ فر شتے عرض کرتے ہیں۔ ہم اس کے حکم سے آئے جس کا تو کلام ہے۔ تو فرماتی ہے ٹھہر جاؤ۔ جب تک میں واپس نہ آؤں ۔ تب تک اس کےپاس نہیں آنا۔ اور بارگاہ الہیٰ میں حاضر ہوکر اپنے پڑھنے والے کےلیے ایسے جھگڑا کرتی ہے۔

کہ مخلوق میں کسی کو ایسا جھگڑا کرنے کی طاقت نہیں ہے۔ یہاں تک کہ اگر مغفرت میں تاخیر ہوجائے تو عرض کرتی ہے کہ وہ مجھے پڑھتا تھا۔ تو نے اسے نہ بخشا۔ وہ فوراً جنت میں جاتی ہے۔ اوروہاں سے ریشمی کپڑے ، آرام دہ تکیے ، پھول اور خشبوئیں قب ر میں لے کرآتی ہے۔ اورفرماتی ہے مجھے آنے میں دیر ہوئی تو گھبرایا تو نہیں پھر بچھونا بچھاتی ۔ اور تکیہ لگاتی ہے۔ فرشتے بحکم رب العلمین واپس چلے جاتے ہیں۔ حضرت سیدنا انس رضی اللہ عنہ سے روایت ے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: قرآن کریم میں ایک سورت ہے جو اپنے قاری کے بارے میں جھگڑا کرے گی ۔ یہاں تک کہ اسے جنت میں داخل کردے گی۔ اور وہ یہی سورت “سورت الملک ” ہے۔ ان حدیث کی روشنی میں سورت الملک کی فضیلت کا اندازہ ہوگیاہو۔ اب بات کرتے ہیں۔ اس وظیفے کی جو کہ آپ کسی بھی دن نماز عشاء کے بعد کرسکتے ہیں۔ آ پ نے اس وظیفہ کو کرنا کچھ یوں ہے۔ کہ آپ نے گیار ہ مرتبہ دردابراہیمی پڑھ کر گیارہ مرتبہ ” سورت الملک ” کی تلاوت کرنی ہے۔

اور آخر میں پھر گیارہ مرتبہ درود ابراہیمی پڑھ سرسجدے میں رکھ کراپنے پیارے پروردگار سے اپنے گن اہوں کی معافی طلب کرنی ہےاورپھر بعد میں اپنے پیارے رب سے دعاکرنی ہے۔ اپنی حاجات ، اپنی ضروریات ، اپنے مسائل کی ،اپنے پریشانیوں کی انشاءاللہ! ہمارا پیار ا رب آپ کی ہر پریشانی ، آپ کی ہر تکلیف اور آپ کے ہر دکھ کو دور فرمائے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.