آج 23 شب کو صرف ایک بار

رمضان المبارک کی 23 ویں شب کو ایک بار ” سورت یسین “اور “سورت الرحمن” پڑھنے اور اس کی فضیلت کے بارے میں بتا ئیں گے ۔ اس کی کیا کیا فضیلت ہے۔ 23 رمضان کو بائیس رمضان کی جو رات ہے یعنی طاق رات جو دوسری طاق رات ہے اس رات ایک ایک دفعہ سور ت یسین اور سورت رحمن پڑھنے

کی کیا فضیلت ہے۔ وہ آپ کوبتائیں گے ۔ ماہ رمضان کی یہ طاق راتیں یہ بڑی عظمتوں والی راتیں ہیں۔ ان راتو ں کے اندر ایسی رات آنے والی ہے جس کو ہمارے پیار ے نبی پاک ﷺ نے لیلتہ القدر کی رات کہا ہے۔ اس رات اللہ تعالیٰ گن اہوں کو بخش دیتا ہے۔ گن اہوں کی ت وبہ کو قبول فرماتا ہے۔ اور اللہ تعالیٰ بےہدایتوں کو ہدایت نصیب فرماتاہے۔ جو قرض تلے دبے ہوتے ہیں ۔اللہ پاک ان کو قرض سے نجات دلا تے ہیں ۔ ا س لیلتہ القدر کی رات میں جو لوگ اپنے نیک مقاصد کے لیے دعا کرتے ہیں۔ اللہ تعالیٰ ان کے نیک مقاصد کو قبول فرماتے ہیں۔ یہ وہ رات ہے جس میں اللہ تعالیٰ نیک بندوں کے صدقے سے لوگوں کی مشکلا ت کو آسان فرماتا ہے۔ یہ رات ایسی رات ہے جس کے بارے میں حضور اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ : اس کو طاق راتوں میں تلا ش کیا کرو۔ وہ طاق راتیں 21،23،25،27،اور 29 ویں ہے۔ ان راتوں میں اللہ تعالیٰ کے پیارے پیغمبر حضور اکرم ﷺ نے ارشا دفرمایاکہ : ان راتوں میں لیلتہ القدر کو تلا ش کرو۔ اللہ تعالیٰ تمہاری بخشش فرمادے گا۔ اللہ تعالیٰ تمہارے گن اہوں کو بخش دے گا۔ اللہ تعالیٰ تمہاری ت وبہ کو قبول کرےگا۔ ان طاق راتوں میں 23 ویں رات ہے۔ اس رات میں قرآن پاک پڑھنے کی بے شمار برکات ہیں۔

اس رات میں “سورت یسین ” اور “سورت الرحمن” پڑھنے سے اللہ تعالیٰ آپ کو بے شمار برکتیں عطافرمائےگا۔ اور اللہ پا ک آپ کی بخشش کا سامان فرمائےگا۔ حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ فرماتے ہیں کہ نبی پاک ﷺ نے ارشاد فرمایا ہے ہر چیز کے لیے قلب ہے اور قرآن کا قلب سورت یسین ہے۔ اور جس نے سورت یسین کو پڑھی اللہ تعالیٰ اس کے لیے دس بار قرآن پڑھنے کا ثواب لکھتا ہے۔ نبی پاک ﷺ نے فرمایاکہ : جو اللہ تعالیٰ کی رضا کے لیے سورت یسین کو پڑھے گا تواس کے گذشتہ گن اہ بخش دیے جائیں گے ۔ لہذا اسے مرنے والوں کےپاس پڑھا کرو۔ نبی پاک ﷺ کا ارشاد ہے کہ : جو دن کے شروع میں سورت یسین پڑھ لے اس کی تمام ضرورتیں پوری ہوجائیں گی۔ سورت رحمن بڑی عظمتوں والی سورت ہے۔

حضرت علی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے نبی پاک ﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ:ہر چیز کی ایک زینت ہے ۔ اور قرآن کی زینت “سورت رحمن ” ہے۔ حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ آپ ﷺنے ارشاد فرمایا ہے کہ : سورت حدید ، سورت واقعہ اور سورت رحمن کی تلاوت کرنے والے کو زمین اور آسمان کی بادشاہت میں جنت الفردوس کا مکین پکا را جاتا ہے۔ 23 ویں شب کو آپ نے ایک دفعہ “سورت یسین ” عشاء کی نماز کے بعد تراویح پڑھنے کے بعد پڑھنی ہے۔ اور ایک مرتبہ “سورت الرحمن” کی تلاوت کرنی ہے۔ اور اس کے بعد اللہ کی بارگاہ میں دعا کرنی ہے۔ مولا!ان دو سورتوں کی برکت سے ہمارے گن اہوں کو بخش دے ۔ اور ہمیں شہادت کا رتبہ عطا فرما۔ ہمیں جو ہے وہ زمین وآسمان کی بادشاہت میں جنت الفردوس کا مکین پکاراجائے ۔ ہمیں برکتیں نصیب فرما۔ یہ دعائیں آپ نے اللہ سے مانگنی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.