حضرت امام حسن رضی اللہ عنہ کا بتایا ہوا اولاد کے لیے وظیفہ

بانجھ پن کا جو لوگ شکا ر ہیں ۔ چاہیں وہ خواتین ہیں۔ چاہیں وہ مرد حضرات ہیں۔ ان کے لیے ایک خاص عمل ہے۔ حضرت سیدنا امام حسن رضی اللہ عنہ سے ایک شخص نے یہ عمل پوچھا تھا۔ کہ اللہ تعالیٰ مجھے اولاد عطافرمادے ۔ کوئی ایسی چیز بتائیے کہ جب انہوں نے اس شخص کو یہ عمل بتایا تو اللہ تعالیٰ

نے اس عمل کے کرنےسے دس بیٹے عطا فرمادیے۔ اللہ تعالیٰ پنجتن پاک کے صدقے تمام بے اولاد افرا د کو اولاد کی نعمت سے نوازے ۔ آ ج کا یہ خاص عمل حضرت سیدنا امام حسن رضی اللہ عنہ کا بتا یا ہو اپاک عمل ہے۔ اس کو ضرور کرلیں۔ انشاءاللہ! آپ کی اولا د نرینہ ضرو ر ہوگی۔ا وراللہ پاک آپ کو بھی اولا د سے نواز دے گا۔ اس کے علاوہ وقتاً فوقتاً آپ کو وظائف کے بارے میں بتاتے رہتے ہیں۔ جن سے لو گ مستفید ہوسکتے ہیں۔ یہ عمل خود بھی کریں اور دوسروں کو بھی بتائیں تاکہ دوسروں کو بھی اس کا فائد ہ پہنچے ۔ کیونکہ یہ ایک صدقہ جاریہ ہے۔ حضرت سیدنا امام حسن رضی اللہ عنہ ایک مرتبہ حضرت امیر معاویہ رضی اللہ عنہ کے پاس تشریف لے گئے ۔ تو آپ سے حضرت امیر معاویہ رضی اللہ عنہ کے ایک ملازم نے عرض کیا۔

کہ میں ایک مالدار آدمی ہوںمگر میرے ہاں کوئی اولاد نہیں ہے۔ کوئی ایسی چیز بتائیے کہ اللہ تعالیٰ مجھے اولاد عطا فرمائے۔ آپ حضرت سیدنا امام حسن رضی اللہ عنہ نے ارشاد فرمایا: “استغفا ر “پڑھا کرو۔ اس نے” استغفار” پڑھا اور اتنی کثرت سے پڑھا کہ روزانہ سات سو مرتبہ “استغفار “پڑھنے لگا۔ اس کی برکت سے اللہ تعالیٰ نے اسے دس بیٹے عطافرمائے ۔ آپ بھی کوئی بھی” استغفار” کی تسبیح روزانہ کی بنیا د پر ، روزانہ سات سو مرتبہ پڑھنا شروع کردیں۔ انشاءاللہ ! پنجتن پاک کے صدقے آ پ کو بھی اللہ تعالیٰ اولاد کی نعمت سے نواز دے گا۔ یہ بہت طاقت ور عمل ہے۔ جس نے بھی کیا اس کو اللہ تعالیٰ نے اولاد کی نعمت سے نوازے دیا۔ لہٰذا آپ بھی اس وظیفے سے بھر پور فائد ہ اٹھائیں۔ اللہ تعالیٰ کی آپ پر نظر کرم ہوگی۔ آمین۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.