لبلبے کی سوزش کا آسان علاج۔

اگر آپ کو گردے، لبلبے یا جگر میں کوئی مسئلہ درپیش ہے تو کوئی مہنگی دوائی استعمال کرنے سے قبل اس آسان نسخے پر عمل کرکے دیکھیں.قدرتی اجزاء سے بنایا گیا یہ نسخہ مکمل طور پر قدرتی ہے اور یہ بہت زیادہ مہنگا بھی نہیں ہے.قدرت نے دھنیے میں ایسی خصوصیات رکھی ہیں کہ اس کی وجہ سے

نہ صرف گردے کی پتھری نکالی جاسکتی ہے بلکہ یہ جگر اور لبلبے کے جملہ امراض کو بھی ٹھیک کرے گا.ہمارے ہاں اسے صرف کھانے کو ذائقہ دار اور خوبصورت بنانے کے لئے استعمال کیا جاتا ہےلیکن اس کے ہمارے جسم پر ان گنت فوائد بھی ہوتے ہیں۔ اس کی وجہ سے جگر کی فعالیت بہتر ہوتی ہے، نظام انہضام درست ہوتا ہے، ہیضے کی صورت میں اس کی وجہ سے پیٹ میں موجود بیکٹیریا اور انفیکشن ختم ہوتی ہے، کولیسٹڑول کم ہوگا،منہ کے چھالے ٹھیک ہوں گے، جگر پر ہونے والی چربی کم ہوگی اور ساتھ ہی آنکھ کے مسائل ٹھیک ہوں گے. گردے کی پتھری اور لبلبے کی صحت کے لئے سبز دھنیے اور پارسلے کو اچھی طرح باریک کاٹ لیں اور اسے ایک برتن میں ڈال کر اتنا پانی ڈالیں کہ تمام پتے اچھی طرح ڈوب جائیں. اب اس برتن کو ڈھانپ چولہے پر رکھ کر 10منٹ تک ابالیں۔

اب اس پانی کو ٹھنڈا کرکے بوتل میں ڈالیں اور ٹھنڈاپانی کا ایک گلاس روزانہ پئیں.کچھ دن میں آپ دیکھیں گے کہ گردے اور لبلبے سے تمام زہریلے مادے پیشاب کے راستے نکل رہے ہیں، یہ عمل وقفے وقفے سے جاری رکھنے سے جسم تروتازہ رہے جب خوراک مناسب طریقے سے ہضم نہ ہو تو کھانے کی خواہش ختم ہونے لگتی ہے اور ہوسکتا ہے کہ وزن میں انتہائی تیزی سے بہت زیادہ کمی ہوجائے۔ جگر میں بائل کی پروڈکشن کی کمی بھی اس کی وجہ ہوتی ہے جو کہ چربی کو ہضم کرنے میں مدد دینے والا سیال ہوتا ہے۔ اگر طویل عرصے تک کھانے کی اشتہا نہ ہو تو ڈاکٹر سے رجوع کیا جانا چاہیے جب شکم میں موجود کسی عضو کو مسائل کا سامنا ہو تو پورے معدے میں درد کا سامنا تو ہوتا ہی ہے، جگر کا درد بہت تیز ہوتا ہے اور ایسا لگتا ہے جیسے خنجر سے مارا جارہا ہو۔ ایسا درد لبلبے میں خرابی کے باعث بھی ہوتا ہے۔

لہذا ایسا درد ہونے پر ڈاکٹر سے رجوع ضرور کرنا چاہیے۔ جب آپ کے جسم کے مختلف حصوں میں سوجن شروع ہوجائے، خاص طور پر ٹانگیں سوج جائیں تو یہ جگر کے امراض میں عام ہوتا ہے، اگر آپ کے پاؤں اکثر سوج جاتے ہیں تو روزانہ بیس منٹ تک چہل قدمی کو عادت بنانے سے خون کی روانی کو ٹانگوں میں بہتر بنایا جاسکتا ہے ایک جرمن تحقیق کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ بلڈ پریشر کے شکار افراد میں جگر کے امراض کا خطرہ تین گنا زیادہ ہوتا ہے۔ اپنے بلڈ پریشر کو چیک کرنا اور دل کی صحت کو بہتر بنانا جگر کے امراض کی صورت میں بہت زیادہ اہمیت رکھتا ہے، دوسری صورت میں موت کا خطرہ بڑھ جاتا ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *