صرف16 رمضان جمعرات کے دن سورت فاتحہ اس طرح پڑھنے سے کیا ملتا ہے؟

اس سو رت کی فضیلتوں وبرکات ہیں اس سورت کا ایک اور نام “سورت شفاء ” ہے حدیث میں اس سورت کے بہت سے فضائل بیان کیے گئے ہیں۔ جیسا کہ حضرت ابو سعید سے روایت ہے کہ میں نما زپڑھ رہا تھا۔ مجھے نبی پاک ﷺ نے بلایا۔ لیکن میں نے جواب نہ دیا۔ جب نماز سے فارغ ہوکر بارگاہ رسالت ﷺ میں حاضرہوا

میں نے عرض کیا یا رسول اللہ ﷺ میں نما ز پڑھ رہا تھا۔ تاجدار رسالت ﷺ نے ارشاد فرمایا: اللہ تعالیٰ نے یہ نہیں فرمایااللہ اور اس کے رسول کی بارگاہ میں حاضرہوجاؤ۔ جب وہ تمہیں بلائے ۔ پھر ارشاد فرمایا: کیا میں تمہارے مسجد سے نکلنے سے پہلے قرآن کریم کی سب سے عظیم سورت نہ سکھاؤ۔ پھر آپ ﷺ نے میرا ہاتھ پکڑ لیا۔ جب ہم نے نکلنے کا اراد ہ کیا۔ تومیں نے عرض کیا یارسول اللہﷺ آپ نے فرمایاتھا۔ کہ میں ضرور تمہیں قرآن مجید کی سب سے عظمت والی سورت سکھاؤں گا۔ توآپ ﷺ نے ارشاد فرمایا: وہ سورت ” الحمد اللہ ” ہے۔ یعنی کہ سورت فاتحہ ہے۔ یہی مثانی اور قرآن عظیم ہے جو مجھے عطا فرمائی گئی۔ اسی طرح حضرت عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں۔ ایک فرشتہ آسمان سے ناز ل ہوا اس نے سیدنا مرسلین ﷺ کی بارگاہ میں سلام پیش کرکے یا رسول اللہ ﷺ آپ کو ان دو نوروں کی بشار ت ہو۔ جو آپ کی علاوہ کسی نبی کو عطا نہیں ہوئی۔ اور وہ دو نوریہ ہیں۔ یعنی کہ سورت فاتحہ اور سورت بقرہ کی آخری آیات۔ اسی طرح حضرت ابی بن وقاص رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے ارشاد فرمایا: اللہ تعالیٰ نے تورات اور انجیل میں ام القرآن کی مثل کوئی سورت نازل نہیں کی ۔

اسی طرح حضرت عبد المالک بن عمیر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ نبی پاک ﷺ نے ارشاد فرمایا: سورت فاتحہ ہرمرض کے لیے شفاء ہے۔ اتنی فضیلتوں اور برکات ہیں سورت فاتحہ کی۔ تو اگر ہم کسی بھی بیماری سے شفاء پانا چاہتے ہیں یا اپنی زندگی کی مشکلات کوختم کرنا چاہتے ہیں تو ہمیں چاہیے کہ ہم کثرت کے ساتھ سورت فاتحہ کو چلتے پھرتے ،اٹھتے بیٹھتے جب بھی ہمیں وقت ملے ہم سورت فاتحہ کی تلاوت ضرور کریں ۔ اب سورت فاتحہ کا ایک خاص اور مجرب وظیفہ بتاتے ہیں۔ جو کہ رمضان کے تیسرے جمعرات کے دن نماز مغرب سے پہلے پہلے ضرور کرنا ہے۔ رمضان کی تیسری جمعرات کے دن نماز مغرب سےپہلے پہلے جب بھی آپ کو وقت ملے ۔ تنہائی میں بیٹھ جائیں۔ تو اکیس مرتبہ “سورت الفاتحہ ” کی تلاوت کریں۔سورت فاتحہ کے او ل وآخر آپ نے درود پاک کولازمی پڑھناہے

اور ساتھ میں ایک پانی کا گلاس رکھ لیناہے۔ پھر آپ نے جب یہ عمل کرلیناہے۔ پھر آپ نے اس پانی پر دم کرلیناہے۔ دم کرنے کےبعد آپ نے وہ پانی گھر میں استعمال کرنا ہے۔ مناسب ہے کہ گھر میں تمام لوگ اس پانی کا استعمال کریں۔ لیکن عمل آپ نے پوری نیت سے کرناہے۔ پورا یقین سے کرنا ہے تبھی آپ کو شفاءملے گی۔ آپ اس عمل کوخود بھی کریں اور اپنے رشتہ داروں اور عزیزواقارب کو بھی بتائیں ۔ تاکہ ان کو بھی فائدہ حاصل ہوسکے ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *