رمضان کا دوسرا عشرہ شروع ہوتے ہی صبح وشام ایک تسبیح اسطرح پڑھیں رزق، دولت ، گھر ، گاڑی، جنت ، بخشش سب کچھ اللہ تعالیٰ عطاکرے گا

آج کا جو وظیفہ ہے اس وظیفے کو کرنے کاطریقہ آ پ کو بتاتے ہیں۔ کہ آ پ نے ان کلمات ایک سو مرتبہ صبح او ر ایک سو مرتبہ شام کو پڑھنا ہے۔ اگر آپ چاہیں تو اس وظیفے کو ہرنماز کے بعد ایک سو مرتبہ پڑھ سکتے ہیں۔ اگر آپ ہر نماز کے بعد ایک سو مرتبہ نہیں پڑھ سکتے ۔ تو آپ اس وظیفے

کو ایک سو مرتبہ صبح اور ایک سو مرتبہ شام کو پڑھ سکتے ہیں۔ یہ کلمات کیا ہیں۔ اور ان کوکیسے پڑھنا ہے؟”استغفراللہ ربی من کل ذنب واتو ب الیہ ” آپ نے ان کلمات کو ایک سو مرتبہ صبح اور ایک سو مرتبہ شام کو پڑھنا ہے۔ اگر ہوسکے تو ان کلمات کو ہرنما ز کے بعد ایک سو مرتبہ آپ پڑھ سکتے ہیں۔ جن لوگوں کو یہ دعاآتی ہے۔ یہ دعا پڑھ لیں۔ جن لوگوں کو یہ دعا نہیں آتی تو وہ ” استغفراللہ ” یا “استغفار” کا ورد بھی کرسکتے ہیں۔ اس کے اول وآخر آپ نے گیارہ گیارہ مرتبہ یا سات سات مرتبہ درود ابراہیمی پڑھنا ہے ۔ درود پاک آپ رمضا ن المبارک میں ویسے بھی چلتے پھرتے اٹھتے بیٹھتے پڑھ لیاکریں۔ اگر آپ کو درود ابراہیمی پڑھنا مشکل لگتا ہے۔ یا آپ کو کہیں غلطی باربار پڑھنےسے لگ جاتی ہے۔

تو آپ کو چھوٹا درود پاک بھی پڑھ سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ کوئی بھی چھوٹا درود پاک پڑھ سکتے ہیں ۔ “استغفرا للہ ” کے پڑھنے کی اتنی فضیلت ہے کہ رمضان کا جو دوسرا عشرہ ہے گن اہوں سے ت وبہ کرنے کا عشرہ ہے ۔ آپ نے اس عشرے میں اللہ تعالیٰ سے اپنی مغفرت طلب کرنی ہے۔ گن اہوں سے ت وبہ کرنی ہے۔ اللہ تعالیٰ کی اپنے بندوں کے لیے نعمتوں اورانعامات کا شمار ممکن نہیں۔ لیکن اللہ کی ان نعمتوں میں رمضان المبارک کو ایک منفرد حیثیت حاصل ہے۔ رسول پاک ﷺ کو اس مہینے کا انتظار رہتا تھا۔ اور اس کا شوق سے استقبال کرتے تھے۔ پہلے عشرہ یعنی عشرہ رحمت اختتام پذیر ہوا۔ اور دوسرا عشرہ مغفرت کا آغاز ہوچکا ہے۔ رمضان المبارک اللہ کی رحمتوں اور بخشش اور مغفرت کا مہینہ ہے۔ وہ لو گ خوش قسمت ہیں۔ جنہوں نے اس مبارک اور مقدس مہینے میں روزے رکھے ۔ اور عبادت کےذریعے اپنے رب کو راضی کیا۔ اپنے اللہ تعالیٰ کی خوشنودی حاصل کی۔ نبی پاکﷺ پر درود بھیجا۔ یہ وہ مبارک مہینہ ہے ۔ جس میں اللہ تعالیٰ نفل کاثواب فرضوں کے برابر اور فرضوں کا ثواب سترگنا بڑھا دیتاہے۔ اتنی زیادہ فضیلت والا مہینہ ہے۔ برکتوں والا مہینہ ہے۔ آپ اس مہینے کی قدر کریں۔

روزے رکھیں۔ نمازیں ادا کریں۔ نوافل پڑھیں۔ اور ت وبہ واستغفار کاورد جتنا ہوسکے دوسرے عشرے میں کریں۔ روزہ ایک ایسی عبادت ہے کہ نبی کریمﷺ کے ارشاد کے مطابق زندگی کے تمام مراحل میں کارآمد ثابت ہوتا ہے۔ رمضان کا دوسرا عشرہ مغفرت کا ہے ۔ جو زندگی کے دوسرے مراحل کارآمد ہے۔ یعنی آخرت کی جو زندگی ہے اس کو آپ بہتر بنا سکتےہیں۔ اپنی آخرت کو بہتر بنانے کا یہ ہمارا پاس موقع ہے۔ جب ہم اس دنیا سے چلیں جائیں گے تو ہم یہی خواہش کریں گے کہ کاش! ہم دنیا میں جائیں اور عبادت کریں۔ تو ہم سب کو اپنی آخر ت کو بہتر بنانے کا موقع ملا ہے۔ ہوسکتا ہے یہ موقع ہماری زندگی میں پھر آئے یا نہ آئے ۔ رمضان المبارک کا مہینہ دیکھنا نصیب ہویا نہ ہو۔ میری گزارش ہے کہ آپ اللہ تعالیٰ سے اپنے گن اہوں کی بخشش کریں۔ جب آپ گن اہوں سے پاک ہوجائیں گے تو اللہ کریم آپ کو دنیا وآخرت کی نعمتوں سے مالا مال کرے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *