کھیرے کے جوس میں یہ ملا کر چہرے پر لگا ئیں۔ اپنی عمر سے دس سال چھوٹے نظر آ ئیں گے۔

آج کل ہر شخص خوبصورت نظر آنا چاہتا ہے گرمیوں کے موسم میں بہت سے لوگوں کے ساتھ یہ مسئلہ ہو تا ہے کہ ان کے چہرے کا رنگ خراب ہو جا تا ہے تو آج میں آپ لوگوں کے ساتھ بہت ہی زیادہ زبردست ریمیڈی شئیر کر نے جا رہی ہوں کہ جس کے استعمال سے آپ کا جو رنگ ہے وہ بہت ہی خاص ہو جا ئے گا

ہر طرح کے جو داغ دھبے ہیں وہ دور ہو جا ئیں گے اور اس کے ساتھ ساتھ جتنے بھی کیل مہاسے ہیں وہ دور ہو جا ئیں گے ۔ تو ہمیں چاہیے کہ ہم اس ریمیڈی سے مکمل طور پر فوائد حاصل کر یں۔ تا کہ ہم ایک خوش گوار جلد کے مالک بن سکیں۔ یہ دونوں ہی ریمیڈی بہت ہی زبردست ہیں اس کو استعمال کرنے سے آپ اپنی عمر سے دس سال چھوٹے نظر آ ئیں گےا ور اس کے علاوہ گرمیوں میں جو جلد خراب ہو جا تی ہے اسے کول اور فریش بنانے کے لیے یہ ریمیڈی بہت بیسٹ ہے تو جو کوئی بھی خوشگوار نظر آ نا چاہتا ہے وہ اس ریمیڈی کو ضرور استعمال کر یں تا کہ جلد سے متعلق جتنے بھی مسائل ہوں وہ حل ہو جا ئیں۔ تو چلتے ہیں ریمیڈی کی طرف چہرے کی رنگت کو گوری بنانے کے لیے اور جوان نظر آ نے کے لیے بہت ہی

زبردست ریمیڈی ہے۔ اس ریمیڈی کے لیے سب سے پہلے ہمیں چاہیے کھیرا اگر آپ چاہیں تو اس کا جوس نکال سکتے ہیں ہمیں کھیرے کا جوس چاہیے یہ بات ہم سب ہی جانتے ہیں کہ آج کل سب ہی کی خواہش ہے کہ اس کی جو جلد ہے وہ سب سے خاص ہو سب سے اچھی ہو اس مقصد کے لیے ہر کوئی بہت سے جتن کر تا پھر تا ہے اس ریمیڈی کو استعمال کریں اور اپنی عمر سے دس سال چھوٹے نظر آسکتے ہیں۔ اس کا جوس نکال لینے کے بعد ۔ دہی لے لیں ایک چمچ دہی لے لینا ہے۔ ملتانی مٹی آدھی چمچ چاہیے ساری چیزوں کو اچھے سے مکس کر لیں اور اس کے ساتھ ساتھ یہاں پر آپ نے آدھا چمچ لیمن لینا ہے اگر لیمن آپ کی جلد کو سوٹ نہیں کر تا تو اس کی جگہ آپ دو تین قطرے بھی ڈال سکتے ہیں دو تین قطروں سے کچھ بھی نہیں

ہو تا ہے یہ آپ کے چہرے کی رنگت کو نکھارے گا ۔ سکن کو بلیچ کر ے گا رنگت کو نکھارتا ہے اور گوری بنا تا ہے ساری چیزوں کو اچھے سے مکس کر لیں تا کہ یہ اچھا سا پیسٹ بن جا ئے اس میں میں نے استعمال کیا ہے دہی اور ملتانی مٹی ان دونوں چیزوں کو اچھے سے مکس کر لیں اور ایک پیسٹ بنا لینے کے بعد اس کو اپنی جلد پر لگا لیں تا کہ اس سے بے شمار فائدہ حاصل ہو سکے آپکو۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *