رمضان المبارک کا مہینہ شروع ہو نے سے پہلے یہ چار کام چھوڑ دیں ورنہ روزے اور نمازیں قبول نہیں ہوں گی۔

رمضان شروع ہونے والا ہے عام روزمرہ زندگی میں دیکھتے ہیں کہ کسی بھی اہم کام کے لیے لازم تیاری کی جا تی ہے اگر کوئی کام بھی تیاری کے بغیر شروع کر دیا جا ئے تو اس میں وہ روح نہیں آ تی اس کام کو آپ صحیح طور پر انجوائے نہیں کر سکتے اور اس کا حق ادا نہیں کر سکتے مثال کے طور

پر امتحان کے آنے سے پہلے آپ کیا کر تے ہیں تیاری کر تے ہیں اگر کوئی شخص تیاری کے بغیر امتحان دینے لگے تو اس کا نتیجہ آپ دیکھ سکتے ہیں اگرچہ وہ پاس بھی ہو جا ئے لیکن اس کے جذبات کیا ہو تے ہیں تو یہ ایک حقیقت ہے کہ دنیاوی زندگی کے کاموں کے ساتھ ساتھ عبادات میں بھی یہی اصول ہے ۔ نماز جیسے اہم فریضے کے لیے اذان اور وضو تیاری کی حیثیت رکھتا ہے۔ ورنہ تو گھڑیوں کو دیکھ کر سورج کو چڑھنے اور غروب ہونے کو دیکھ کر نماز پڑھی جاتی اور جن گھروں میں اذان کی آواز نہیں آتی وہاں پر نماز اس طرح روح پرور نہیں ہو تی جس طرح اس جگہ پر جہاں آپ کو اذان کی آواز آتی ہے آپ کہیں بھی کام کر رہے ہوں تو اس اذان کی اہمیت آپ کو محسوس ہو گی نماز کا وقت ہو گیا جلدی کرو یہ کام جلدی

سمیٹو نماز کا وقت ہے تو اذان کے ساتھ ہی آپ کی تیار ی شروع ہو جا ئے گی۔ گویا کوئی بھی کام ہو ۔ اور ہر کام سے پہلے تیاری کر نی چاہیے۔ ذہنی تیاری اور عملی تیاری۔ ذہنی تیاری میں کیا چیزیں شامل ہیں کہ آپ اپنی سوچ کو اپنے دھیان کو اپنے احساسات کو اپنے جذبات کو اس طرف موڑنا شروع کر دیں ایسے اسباب اور ایسے حالات سے گزریں کہ جس سے آپ ذہنی طور پر اس چیز کے کرنے کے لیے فوکس ہو جا ئیں عملی تیاری میں کیا چیز آتی ہے کہ مثلاً آپ کو معلوم ہے کہ رمضان میں آپکو اتنا راشن چاہیے یہ چیزیں خریدنا ہیں کپڑے بنانے ہیں عید پر جو بھی آپ سمجھتے ہیں کہ آپ کو اتنے لوگوں کو افطار کر وانے ہیں روزے ۔ مثلاً اسی قسم کی تیار جو ہو تی ہے وہ عملی تیاری ہو تی ہے۔کچن کی صفائی بیڈ کی جہاں آپ نے

عبادت کرنی ہے ہر ایک چیز جو ہے بالکل ترتیب سے کر لیں اور اتنی ترتیب سے کر لیں بلکہ میں تو یہ کیا کر تی تھی کہ جو بیڈ بستر وغیرہ سال بھر اٹھے رکھے جا تے تھے ہر چیز اس طرح ایسی جگہ پر رکھ لیتی تھی صرف اسے ایک منٹ اس میں لگے اور ہر چیز جلدی جلدی تبدیل ہو جا ئے اور لانڈری بھی رمضان کے لیے بچا کے نہ رکھیں اس طرح آپ جب رمضان جیسے عید کی تیاری کر تے ہیں عید سے بڑ ھ کر رمضان کے لیے تیار ہو جا ئیں۔ عبادات کی تفصیل لکھ کر تیاری کر لیں پھر خاص طور پر نفل ادا کر یں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.