رمضان کا چاند دیکھتے ہی تین منٹ یہ عمل کر لیں ۔ سات نسلوں تک بھی رزق ختم نہ ہو گا۔

ٌدنیا اور راہِ حق کے مسافر میں فرق جا ننا ہو تو رمضان المبارک کا انتظار کیا کر یں۔ اللہ کے بندے رمضان المبارک کے انتظار میں گھڑیاں گنتے ہیں جب کہ دنیا دار کی نظر عید الفطر پر ہو تی ہے ثواب تو دونوں کو ملے گا لیکن مدارس کے لحاظ سے دونوں مختلف ہیں روزہ اپنی فضیلت کے حساب سے آج

کے دن تک صلح امت کی مرغوب ترین عبادت رہی ہے ماہِ رمضان میں جو لوگ تسبیحات کر تے ہیں وہ اس ماہ کے دوران یہ چار وظائف بھی ساتھ کر تے ہیں یہ انتہائی مختصر اور جامع وظائف ہیں جو انسان کو رزق و صحت کی بحالی اور گنا ہ وں سے بچانے میں مدد فراہم کر تے ہیں۔
اس سے پہلے کہ ہم موضوع کی طرف آ ئیں میں یہاں پر ایک بات کہنا چاہتا ہوں کہ میری ان باتوں کو بہت ہی دھیان سے سنیے گا تاکہ کسی بھی قسم کا کوئی بھی مسئلہ نہ ہو اس وظیفے پر عمل کر تے ہو ئے۔ ماہ ِ رمضان کی آمد آمد ہے ۔ یہ بر کتوں والا مہینہ ہے ۔ اس ماہ کی عظمت کا اندازہ اس بات سے لگا یا جا سکتا ہے کہ قرآنِ مقدس کا نزول اسی پاک مہینے میں ہوا۔ رمضان المبارک کی فضیلت اور اس کے تقاضے یہ ہیں کہ اللہ رب العزت

نے اس ماہِ مبارک کی اپنی طرف سے خاص نسبت فرما ئی ہے رمضان کا پہلا عشرہ رحمت کا ہے۔دوسرا عشرہ مغفرت کا ہے اور تیسرہ عشرہ سبحان اللہ ج ہ نم کی آ گ سے نجات کا ہے رمضان کی اہمیت کے بارے میں اللہ تعالیٰ نے حضرت ِ محمد ﷺ سے ارشاد فر ما یا کہ اگر مجھے آپ کی اُمت کو جہنم میں ہی جلا نا ہو تا تو رمضان کا مہینہ میں کبھی نہ بنا تا جب رمضان المبارک کا چاند نظر آ تا ہے تو آپ ﷺ فرما یا کر تے تھے کہ یہ چاند خیر و بر کت کا ہے میں اس ذات پر ایمان رکھتا ہوں جس نے تجھے پیدا فر ما یا ۔ حضرت جبرائیل ؑ نے بد دعا کی کہ ہ ل ا ک ہو جا ئے وہ شخص جس کو رمضان کا مہینے ملے اور وہ اپنی بخشش نہ کروا سکے تو حضرت جبرائیل ؑ کی اس بد دعاپر حضور اکرم ﷺ نے آمین فر ما یا۔ حضرت جبرائیل ؑ کی یہ بد دعا اور اس پر نبی ِ کریم ﷺ کا آمین کہنا اس بد دعا سے ہمیں رمضان کی اہمیت کو سمجھ لینا چاہیے۔ رسول کریم ﷺ کا ارشاد ِ مبارک ہے کہ رمضان کی جب پہلی رات ہو تی ہے تو شیاطین کا بند کر دیا جا تا ہے قید کر دیا جا تا ہے اور مضبوطی سے باندھ دیا جا تا ہے سرکش جنوں کو بھی بند کر دیا جا تا ہے اور جہ نم کے دروازے بھی بند کر دئیے جا تے ہیں۔ اس کا کوئی بھی دروازہ کھلا نہیں رکھا جا تا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *