پسند کی شادی اور عشق کی شادی میں کیا فرق ہے آج کل ماں باپ عشق کی شادی کے خلاف کیوں ہیں؟

آج کا ہمارا موضوع ہے پسند یا عشق لو مریج کیسوں کے متعلق عام طور پر یہ کہا جا تا ہے کہ شادی میں لڑکیوں کی پسند کا لحاظ رکھنا ضروری ہے اور شریعت کا نام لےکر بغیر ولی کے لڑکے اور لڑکی کا نکاح درست قرار دیا جا تا ہے حالانکہ پسند اور ولی کے بغیر شادی کی ضرورت میں زمین آسمان

کا فرق ہے جہاں تک لڑکی کی پسند کا تعلق ہے اسلام نے اسے حق دیا ہے عائشہ ؓ سے روایت ہے کہ میں نے رسول پاک ﷺ سے پو چھا اگر کسی لڑکی کا نکاح اس کے گھر والے کر دیں تو کیا اس سے اجازت لینا چاہیے؟ آپ ﷺ نے ارشاد فر ما یا کہ ہاں اس سے اجازت لینا چاہیے۔ ام المو منین حضرت عائشہ ؓ نے کہا وہ تو شرمائے گی آپ ﷺ نے فر ما یا اس وقت اس کا چپ رہنا ہی اجازت ہے۔ اجازت سے مراد یہی ہے کہ ولی لڑکی کی پسند کو واضح رکھنے کا ذمہ دار لیکن کیسی پسند۔ یہ بھی تو واضح کر نا چاہیے رسول اللہ ﷺ نے ولی کو تاکید کی ہے کہ جب تمہیں دین و اخلاق میں اچھا شخص نکاح کا پیغام دے تو اس کا پیغام قبول کر و ورنہ زمین میں بہت بڑا فساد پھیل جا ئے گا تو پتہ چلا کہ اسلام ولی کو دین و اخلاق میں اچھا

شخص دیکھ کر نکاح کرنے کی تا کید کر تا ہے لہٰذا جس شخص کا دین و اخلاق اچھا ہو اور لڑکی اس سے نکاح کرنے کے لیے ہاں کر دے یا خاموشی اختیار کر کے اجازت دے دے شریعت نکاح کے آداب بتاتی ہے وہ اس کے مطابق ہو گا نیز یہ نکاح لڑکی کی پسند کا نکاح کہلا ئے گا۔ دوسری صورت یہ ہے کہ ولی کسی ایسے شخص کے نکاح کے لیے اپنی لڑکی سے اجازت طلب کر ے تو دینی لحاظ سے کھا تا پیتا اور قبول صورت اور شریف گھرانے کا لڑکا ایسے رشتے پر اگر ہاں یا خاموشی اختیار کر لیتی ہے تو یہ نکاح بھی لڑکی کی پسند کانکاح ہی کہلا ئے گا۔ اسلام نے جو نکاح کے آداب بتائے تھے اس نے ان آداب کا ادب کیا ہے۔ اس کی پاسداری کی ہے تو ہمیں چاہیے کہ ہم بھی ہر معاملے میں اپنے دین و مذہب کی پاسداری

کر یں۔ تا کہ ہم قسم کا جو ہمارا مسئلہ ہے وہ حل ہو سکے۔ ولی کسی ظ ا لم بد صورت شرا ب ی بوڑھے آدمی کے ساتھ لڑکی کا نکاح کر دے اور لڑکی کسی قسم کا احتجاج نہ کرے تو کہا جا ئے گا کہ یہ نکاح بہر حال لڑکی کے ہاں یا قبول کرنے پر ہی ہوا۔ ایسے میں اگر لڑکی احتجاج کر تی ہے تو وہ حق بجا ہے لیکن اس احتجاج میں اپنے خاندان ہی کے افراد سے حمایت حاصل کر ے گی وہ کسی این جی اوز یا کسی اور بیرونی آدمی کی حمایت حاصل نہیں کر ے گی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.