جسم کے مختلف حصوں پر مسوں سے چھٹکارے کا آسان طریقہ

ناظرین ہمارے آج کا مسئلہ کہ جسم کے مختلف حصوں پر مسوں سے چھٹکا را کیسے پا یا جائے۔ تو آ ئیے دیکھتے ہیں کہ مسے کیا ہوتے ہیں۔ مسے ایک جِلدی بیمار اور میڈیکل کی زبان میں اسے اکروکورڈونز کہتے ہیں۔ اکثر جِلد پر کالے رنگ کے چھوٹے بد نما ابھر پیدا ہو جاتے ہیں اسے مسے کہتے ہیں۔ یہ مرض بچوں

اور بڑوں دونوں کو لاحق ہو سکتا ہے۔ مسے پھیل بھی جاتے ہیں اور چہرے اور جسم کی جو خوبصورتی کو تبا ہ کر نے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ عموماً مسے تعداد میں زیادہ ہوتے ہیں اور جسم کے مختلف حصوں پر نمودار ہو تے ہیں لیکن یہ کسی ایک مقام پر ہجوم کی صورت میں بھی طاہر ہو سکتے ہیں۔ اور بعض اوقات اچانک یہ خودبخود غائب بھی ہو جاتے ہیں۔ مسے کسی کو اچھے نہیں لگتے، چہرے ، گردن یا جسم کے ان حصوں پر جو کھلے رہتے ہیں، مسے نکل آ نا پریشان کن ثابت ہوتا ہے۔ خاص طور پر خواتین اپنی خوبصورتی کے حوالے سے زیادہ محتاط ہوتی ہیں۔ اس لیے مسے ان کے لیے زیادہ پریشان کن ثابت ہوتے ہیں۔ اگر چہ یہ تکلیف دہ نہیں ہوتے لیکن چہرے یا گردن پر ہوں تو بد نما لگتے ہیں۔ زمانہ قدیم سے مسے ہتانے یا

ختم کرنے کے لیے مختلف طریقے آ زمائے جاتے رہے ہیں۔ ریزر یا بلیڈ کے ساتھ کاٹنے پر یہ دوبارہ اگ آ تے ہیں، پرانے زمانے میں گدھے یا گھوڑے کی دم کا بال لے کر اسی مسے کے گرد کس کر باندھ دیا جاتا تھا اور چند دن میں یہ بال مسے کو اس طرح سے کاٹ ڈالتا تھا کہ درد کا احساس تک نہ ہوتا تھا اور نہ ہی خون نکلتا تھا۔ اب مگر ایک ایسا طریقہ بھی عام ہو رہا ہے جس سے بغیر کسی تکلیف کے ان سے نجات پائی جا سکتی ہے۔ اس مقصد کے لیےآپ کو چاہیے ایپل سیڈر یعنی سیب کا سرکہ اور تھوڑی سی روئی۔ روئی کا ایک چھوٹا سا ٹکڑا لیں جو سائز میں مسے سے بڑا نہ ہو، اسے سر کے میں بھگو ئیں اور پھر ہلکا سا نچوڑ کر اسے مسے پر رکھیں، اور اسے وہاں پر ٹکائے رکھنے کے لیے پٹی باندھ دیں یا ٹیپ

چپکا دیں۔ رات کو یہ عمل کر کے سو جائیں اور صبح اٹھ کر اسے صابن سے دھو لیں۔ ہر روز یہی عمل تین چار روز تک دہر ائیں، پہلے مسے کی رنگت بدلے گی، بھورے سے سیاہ ہوگی اور پھر وہ سو کھنے لگے گا، تین چار روز بعد وہ خود ہی جھڑ کر علیحدہ ہو جائے گا۔ اس عمل سے اول تو جلد پر کوئی نشانہ نہیں آ ئے گا تاہم اگر ایسا ہو بھی تو ایلو ویرا کا جوس چند دن مسلسل لگا تے رہیں۔ داغ خود ہی ختم ہو جائے گا۔مسوں کا لہسن سے علاج:لہسن کے چند ٹکڑے پیس لیں پھر پسے ہوئے لہسن کو مسوں پر لگا کر پٹی باندھ دیں اور ایک دن بعد پٹی کھو لیں۔ اور نیم گرم پانی سے دھو لیں ۔ اس عمل کو کچھ دنوں تک کر یں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.