آج میں آپ کو ایک تسبیح بتا رہاہوں پریشان ہوجائینگے اتنی دولت کیسے اٹھاؤں

مصائب و آلام، مصیبتوں اور پریشانیوں پر شکوہ کو ترک کر دینا صبر ہے۔ مگر حقیقت یہ ہے کہ صبر کرنا مشکل کام ہے کیونکہ اس میں مشقت اور ک.ڑواہٹ پائی جاتی ہے ۔ صبر کی اس تلخ.ی کو ختم کرنے کے لیے ایک اور صبر کرنا پڑتا ہے جسے مصابرہ کہتے ہیں۔ جب بندہ مصابرہ کے درجے پر پہنچتا ہے

تو پھر صبر کرنے میں بھی لذت محسوس کرتا ہے۔ اس کی مثال حضرت ایوب ؑ اور حضرت ابراہیم ؑ کا صبر ہے۔ صبر ایک عظیم نعمت ہے جو مقدر والوں کو نصیب ہوتی ہے۔ صبر مقاماتِ دین میں سے اہم مقام ہے اور اللہ تعالیٰ کے ہدایت یافتہ بندوں کی منازل میں سے ایک منزل اور اولوالعزم کی خصلت ہے۔ خوش قسمت ہے وہ شخص جس نے تقویٰ کے ذریعے ہوائے نف س پر اور صبر کے ذریعے شہ واتِ نفس پر قابو پا لیا۔صبر صرف مشکلات پر نہیں ہوتا بلکہ امورِ اطاعت و فرمانبرداری میں بھی صبر ہوتا ہے۔ اللہ تعالیٰ کے عذاب پر صبر کرنے سے اُس کی اطاعت پر صبر کرنا زیادہ آسان ہے۔ لہٰذا آج صبر کی اُس اہمیت اور اُس کی صداقت کو سمجھنے کی ضرورت ہے تا کہ ہم اس معاشرے کو خوبصورت بنانے کے ساتھ ساتھ اپنی دنیا و آخرت بھی سنوار سکیں۔حضرت ابو ذر غفاری ؓ فرماتے ہیں کہ ایک دن پیغمبر حضرت محمدﷺ نے ارشاد فرمایا میں ایک ایسی آیت کے بارے میں جانتا ہوں جو

انسانوں کے تمام مسائل حل کرسکتی ہے ۔ اس کے بعد آپ نے آیت کی تلاوت فرمائی اور متعدد مرتبہ اس کی تلاوت فرمائی ۔ اللہ تعالیٰ نے فرمایا وہ رزق دینے کا وعدہ اس کا ہے وہ وہاں سے رزق عطاء فرمائے گا جہاں سے انسان نے سوچا بھی نہیں ہوگا ۔ پیارے حبیبﷺ سے منقول ایک حدیث میں آیا ہے جوزیادہ سے زیادہ استغفار کرے گا۔ خداوند عالم اس کی ہر پریشانی کو کشائش اور تنگ.ی کو آسائش میں بدل دیگا اسے وہاں سے رزق عطاء فرمائے گا جہاں سے اسے گمان بھی نہیں ہوتا ۔ آج ہم آپ کیلئے ایسا وظیفہ لیکر حاضر ہوئے جس میں انشاء اللہ آپ کو ایسی تسبیح بتائی جائیگی جس کے کرنے سے رزق میں برکت کے معاملات ہوجائیں گے ۔ دولت اللہ تعالیٰ عطاء کرے گی اور خدا ئے بزرگ برتر فضل وکرم ورحم سے انشاء اللہ آپ کی مالی مشکلات اور مالی پریشانیاں دور ہوجائیں گی ۔ پیارے حبیبﷺ نے آپ کے بعد اصحاب یہ کہتے ہوئے کہ اللہ تعالیٰ نے ہماری رزق کی ذمہ داری لے

لی ہے کام کار چھوڑ عباد ت الٰہی میں مشغول ہوگئے ۔ حضرت محمدﷺ کو جب اس کا علم ہوا تو آپﷺ نے فرمایا جو بھی ایسا کرے گا اس کی دعا قبول نہیں ہوگی ۔ تمہیں چاہیے دعا کے ساتھ سہی اور کوشش جاری رکھو ۔ اللہ تعالیٰ کے بتائے ہوئے راستے کے عین مطابق کسب حلال کی کوشش میں لگ جائیں اور محنت کریں ۔آپ نے غسل کرکے پا ک صاف جگہ پر بیٹھ جائیں اول وآخر گیارہ مرتبہ درود پاک پڑھنا ہے ۔ پھر آپ نے 100مرتبہ بسم اللہ ِانا للہ وانا الیہ راجعون یا وھابُ یا رزاقُ پڑھنا شروع کرنا اس کو تب تک پڑھتے رہنا کہ جب تک آپ کو سکون میسر نہ ہوجائے ۔ اس کے لگاتار کرتے رہنے سے آپ کے مسائل انشاء اللہ دور ہونا شروع ہوجائیں گے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.