بالوں کو موٹا گھنا اورمضبوط اور لمبا کر نے کے لیے۔

اکیس دن اس ریمیڈی کو استعمال کر یں اور بالوں کی لمبائی کو دو گنا کر یں عید آ نے تک آپ کے بالوں میں ایک الگ ہی شائن ہو گی۔ ہلکے جھڑ رہے پتلے بال ایک دم سے غائب۔ بالوں کو دو گنا تیزی سے بڑھا ئے گا یہ نسخہ اگر آپ بالوں کے جھڑنے سے پریشان ہیں بال لگا تار ٹوٹ رہے ہیں بال بالکل

پتلے ہو گئے ہیں دراصل زیادہ کیمیکل والی چیزیں استعمال کرنے سے بھی بال جھڑنے لگتے ہیں لیکن یہ ریمیڈی اکیس دنوں تک استعمال کرنے سے بالوں کی مکمل تیزی سے گروتھ ہو ں گے بال لمبے ہوں گے گھنے بھی ہوں گے تو ہماری باتوں کو بہت ہی زیادہ غور سے سنیے گا تاکہ اس ریمیڈی سے مکمل طور پر آپ کو فائدہ ہو سکے۔ یہ ریمیڈی تیار کرنے کے لیے ہمیں چاول چاہییں ایک باؤل دوسری چیز جو ہمیں چاہیے وہ ہے پیاز پیاز لیں سرخ کلر کا کیونکہ اس میں سلفر زیادہ مقدار میں پا یا جا تا ہے اسے چھلکا اتار کر چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹ لیں۔ اس نسخے کو استعمال کرنا بھی بہت ہی آسان ہے ایک ضروری بات میں یہاں پر ایک بات کہہ دوں کہ بالوں کی لمبائی کو بڑھا نے کے لیے سب سے اہم وجہ جو ہو تی ہے بالوں کی جڑوں

تک انفیکشن کا پھیل جا نا جس سے بالوں کی لمبائی نہیں بڑھتی بال آہستہ آہستہ پتلے ہونے لگتے ہیں اور ان کا ٹوٹنا شروع ہو تا ہے لیکن پیاز بالوں سے انفیکشن ختم کر تا ہے بال پتلے بھی نہیں ہو تے اور نہ ہی جھڑتے ہیں ۔ گرے ہئیر کا مسئلہ ختم ہو تا ہے اور بالوں میں شائن آ تی ہے ایک کٹے ہوئے پیاز اور ایک باؤل چاول کو کسی بر تن میں ڈال دیں اس میں چار سے پانچ گلاس پانی ڈالیں اور چو لہے پر رکھیں آ گ جلا دیں ۔ آپ نے اسے دھیمی آنچ پر پکا نا ہے۔ بالوں کی گروتھ ہو نا بال خوبصورت ہو نا یہ مشتمل ہو تا ہے ہمارے بالوں کی جلد پر۔ اس کے لیے چاول بہت فائدہ مند ہیں اس میں ہر طرح کی ایسے نیوٹرینٹس پائے جا تے ہیں جو ہمارے بالوں کے لیے بہت ہی زیادہ فائدہ مند ہیں۔ اچھے سے یہ چیز پکانے کے بعد اس کا جو

پانی ہے وہ الگ کر دینا ہے اور الگ کر دینے کے بعد اس پانی کو اپنے بالوں پر لگا نا ہے اس چیز کو اپنے بالوں پر لگانے کے بعد یہ ہو گا کہ آپ کے جو بال ہوں گے وہ بہت ہی زیادہ خوبصورت ہو جا ئیں گے بہت ہی زیادہ گھنے ہو جا ئیں گے اور اس سب کےبعد آپ کا جو اعتماد ہے وہ بھی خود پر بحال ہو جا ئے گا۔ تو ہمیں اس ریمیڈی سے لازماً فائدہ اٹھا نا چاہیے ۔ تا کہ ہم اپنے بالوں کو بہت ہی زیادہ اچھے سے بڑھا سکیں اور ان کی نشو و نما کر سکیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *