عاشق رسول جن کا جنازہ پڑھا

آقائے دو عالم ﷺ نے اپنے تمام عاشقان کو عزت ورحمت سے نوازا ہے خواہ عاشق رسول ، انسان ، حیوان، جمادات، نباتات، ملائکہ اور جنات میں سے ہوں بس ایک محبت رسول اور عشق رسول ہی ایسا عمل ہے جو حضرت علی رضی اللہ عنہ ، فرماتے ہیں کہ آنحضرت ﷺ اور میں مدینہ پاک کی ایک پہاڑی پربیٹھے

ہوئے تھے ۔ ایک صعیف العمر شخص ہاتھ میں عصا تھامے آنکلا اسے دیکھتے ہی آپﷺ نے فرمایا یہ بنی آدم نہیں ہے ۔ بوڑھا ہمارے قریب آیا۔ عرض کی میں جن ہو یا رسول اللہ ! سرکاردوعالم نے فرمایا ! تمہاری عمر کتنی ہے؟ جن نے کہا جس دن شیطان نے حضرت آدمؑ کو سجدہ کرنےسے انکار کیا تھا میں پاس ہی کھڑا تھا اور قابیل نے ہابیل کو قتل کیا میں دیکھ رہا تھا ۔ حضور میں نے تمام انبیاء کی زیارت کی ہے۔ میرے تمنا تھی کہ خدا اتنی عمر دے کہ آپ کی زیارت کر سکوں اور آپ کی خدمت میں اپنے تمام گناہوں کی معافی مانگوں ۔ آقا دو عالم ﷺ نے فرمایا: مجھ سے ملاقات کا تمہیں اتنا شوق کیوں رہا؟کائنا ت کی ہر شے کو انمول اور عزت والا اس نے عرض کی اس لیے کہ یا رسول اللہ ﷺ آپ امام الانبیاء ہیں محشر میں تمام انبیاء

کی نگاہیں آپ پر مرکوز ہوں گی آپ سےپہلے تمام نبی آپ کی بشارت دینے رہے وہ مجھ پر سلام پیش کرتے رہے لیکن میں انکار کرتا رہا۔ مجھے آپ کی امت میں شامل ہونے کی آرزو تھی بالاآخر میں نے شرف پاہی لیا جن عشق رسول میں عرض کر رہا تھا کہ میں نے مشرق و مغرب کی تمام مخلوق کو آپ کا تمنائی دیکھا۔ اللہ نے آپ کے غلاموں کے لیے جنت اور دشمنوں کےلیے جہنم تیارکر رکھی ہے۔ آپ ﷺ نے فرمایا میں پہلے ہی سے سب کچھ جانتا ہوں پھر جن نےاسلام قبول کرلیا کلمہ پڑھ کر آقائے دو عالم ﷺ کا امتی مسلمان بن گیا۔ اسی وقت جبرائیل ؑ حاضر ہوئے اور بشارت دی کہ اس جن

کی توبہ قبول ہوچکی ہے۔ حضوراکرمﷺ نے جن کو قرآن کی ایک یارسول اللہ ﷺ سنا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے آپ کی امت کے لیے زمین پر ایک ایسا (گھر) خانہ کعبہ بنایا ہے جس میں خشوع کے ساتھ عبادت کی جائے تو اللہ تعالیٰ تمام گناہ معاف فرما دیتا ہے ۔ حضور اکرم ﷺ نے فرمایا! “ہاںوہ اللہ کا گھر ہے۔” تومجھے اس مقام پر لے چلیں یا رسول اللہ ﷺ نے جن کا ہاتھ تھاما اور تین قدم رنجہ فرمائے۔ ابھی چند ہی قدم چلے ہوں گے کہ جن کی قضا (آخری وقت آگیا ) اور جن کا انتقال کر گیا۔ حضور اکر مﷺ نے جن پر جنازہ پڑھا اس طرح وہ پروانہ رسول مغفور ہوکر دنیا سے اٹھ گیاہم پہاڑی کے نیچے اتر کر مدینہ پاک آگئے۔سورت یاد کرادی جن پھر عرض کرنے لگا۔بنا دیتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *