نمک کے پیکٹ پر یہ عمل کر لیں ۔ پھر کمال دیکھیں

پیر کے دن کا ایک ایسا عمل ہے کہ جس کے کرنے سے بہت زیادہ کما لات ملتے ہیں۔ میں اپنی بات کی طرف آ نے سے پہلے میں آپ کو درودِ پاک کی فضیلت کے بارے میں بتاؤں گی۔ کہ درودِ پاک کی کتنی ایک فضیلت ہے۔ اور درودِ پاک کی فضیلت کے بعد میں آپ کو پیر کے دن کے وظیفے کی فضیلتیں بتاؤں گی۔

جس پر آپ عمل کر کے بے شمار فوائد حاصل کر سکتے ہیں۔ حضور ﷺ کا فرمان ِ عالی شان ہے۔اللہ کی خاطر آپس میں محبت رکھنے والے۔ وہ لوگ جب آپس میں ملیں ۔ ما مصافہ کر یں ۔ یعنی ہاتھ ملا ئیں اور نبی ﷺ پر درود ب ھیجیں تو ان کے جدا ہونے سے پہلے دونوں کے اگلے پچھلے گناہوں کو معاف کر دیا جاتا ہے۔ حضرت عمر بن خطاب سے روایت ہے کہ ایک دن نبی کریم ﷺ کے پاس بیٹھے تھے کہ اچانک سفید لباس اور سیاہ بالوں والا ایک شخص آیا۔ اس پر نہ کوئی سفر کا اثر تھا اور نہ ہی ہم میں سے اسے کوئی پہچا نتا تھا۔ وہ آپ ﷺ کے پاس آ کر بیٹھ گیا اور اس نے اپنے گھٹنے رسول ﷺ کے گھٹنوں سے ملا دیے اور اپنے ہاتھ زانوں پر رکھ دیے اور کہنے لگا کہ اے رسول اکرم ﷺ سے کہنے لگا کہ اے رسول ﷺ مجھے دینِ

اسلام کے بارے میں کچھ بتائیے۔ پیارے آقا ﷺ مسکرا ئے اور جواب میں ارشاد فر ما یا کہ اسلام یہ ہے کہ تم اس بات کی گواہی دو کے اللہ پاک کے سوا کوئی بھی عبادت کے لائق نہیں ہے اور محمد ﷺ اللہ کے آخری رسول اور نبی ہیں۔ اور تو نماز قائم کرے۔ زکوٰۃ دے۔ رمضان کے روزے رکھے اور کعبہ کا حج کرے۔ اس نے کہا ۔ آپ نے سچ فر ما یا۔ ہمیں اس پر تعجب ہوا۔ کہ خود ہی سوال کرتا ہے اور خود ہی تصدیق کرنے کے لیے باتیں کرتا ہے۔ پھر اس نے کہا کہ مجھے ایمان کے بارے میں بتایے۔ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فر ما یا کہ ایمان یہ ہے کہ اس بات کی گواہی دو کے اللہ پاک کے سواکوئی عبادت کے لائق نہیں ہے اور محمد ﷺ اللہ کے آخری نبی اور رسول ہیں۔ اس نے کہا ۔ آپ نے سچ فر ما یا۔ پھر اس نے کہا کہ مجھے احسان

کے بارے میں بتائیے۔ دو جہانوں کے سردار حضور پاکﷺ نے ارشاد فر ما یا کہ تو اللہ پاک کی عبادت اس طرح کرے کہ گو یا تو اسے دیکھ رہا ہے۔ اگر تو اسے نہیں دیکھ سکتا تو وہ تو تجھے دیکھ ہی رہا ہے۔ اور پھر کہنے لگا کہ مجھے قیامت کے بارے میں بتائیے۔ تو آپ ﷺ نے ارشاد فر ما یا کہ اللہ کو بہتر پتہ ہے۔عرض کی قیامت کی نشانیاں ہی بتا دیں۔ فر ما یا لونڈی اپنے ما لک کو جنے گی اور تم دیکھو گے ننگے پاؤں اور ننگے جسم اور تعمیرات میں ایک دوسرے پر فخر کرتے ہوں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *