دن میں کسی وقت ایک تسبیح اس طرح پڑھ لیں

معزز ناظرین و حاضرین دن میں کسی بھی وقت ایک تسبیح اس طرح پڑھ لیں گے تو اللہ کا وعدہ ہے جو ما نگو گے فوراً جھولیاں بھر جائیں گی۔ اللہ تعالیٰ کے خاص اور سب سے بڑا اسمِ اعظم کا خاص وظیفہ ہے۔ اگر آپ سچے دل سے کامل بھروسے کے ساتھ یہ ایک تسبیح روزانہ کسی بھی وقت پڑھ سکتے ہیں

تو اللہ کا وعدہ ہے۔ اللہ آپ کو جو مانگو گے۔ فوراً عطا فرمائیں گے۔ دین و دنیا کی خوشیاں ، بھلا ئیاں، امن و سکون، صحت اور دولت اور رزق ۔ جو بھی آپ کی سب سے بڑی خواہش ہو گی وہ برسوں سے پوری نہیں ہوئی۔ انشاء اللہ اس ایک تسبیح کے بعد ضرور پوری ہو گی۔ کیو نکہ رب نے خود وعدہ کیا ہے کہ جو بندہ اس تسبیح کو ایک دفعہ بھی پڑھ لے گا۔ اور مجھے میرے اس نام کے ساتھ جب پکارے گا تو اللہ تعالیٰ کی ذات جوش میں آکر فرشتوں میں آکر کہ جاؤ فلاں بن فلاں کی اس ضرورت کو پورا کر دو۔ پہلے تو گزارش ہے کہ جو بھی عمل ہو۔ اسے خالص نیت کے ساتھ، خوش و خرم کے ساتھ کیا کریں۔ با وضو حالت میں کیا کریں اور کوئی بھی کسی قسم کا وظیفہ ہو تو اس کا مذاق نہیں اڑانا۔ آپ کو جہاں سے بھی وظیفہ ملے۔ آپ درودِ پاک سے وظیفہ شروع کریں۔ انشاء اللہ آپ کی تمام حاجات قبول ہو ں گی۔ آپ نے سب سے پہلے باوضو حالت میں اول آخر گیا رہ گیارہ مرتبہ درودِ ابر ا ھیمی درمیان میں اللہ تعالیٰ کا اسمِ مبارک ” یا قادر” یعنی قدرت رکھنے والا ایک سو مرتبہ پڑھ لینا ہے۔

اور دن میں کسی بھی وقت آپ یہ تسبیح پڑھ سکتے ہیں۔ اگر آپ دن میں تسبیح نہیں رکھ سکتے ۔ تو آپ کسی بھی وقت کی نماز۔ جب آپ نماز کے لیے وضو کرنا شروع کریں تو آپ اپنے جسم کا ہر ایک عضو دھونے کے ساتھ ساتھ یعنی اپنا وضو شروع کرنے سے پہلے۔ یعنی ہاتھ دھوئیں تو ہاتھ دھو نے کے ساتھ۔ کلی کرنے کے ساتھ ساتھ “یا قادر” کا ورد کریں اور وضو ختم ہو جائے تو اپنی حا جات کے لیے دعا مانگیں۔ انشا ء اللہ تعالیٰ آپ کی تمام دعائیں قبول ہو نگی۔ آپ کی تمام جائز حاجات پوری ہو ں گی۔دوسری جانب منافقین بھی آیت محاربہ کی سزا سے آگاہ تھے اور یہی وجہ تھی کہ وہ بادل ناخواستہ اس مہم میں شامل ہو رہے تھے. تاہم انکے دل اس لازمی مہم سے فرار چاہ رہے تھے اور اسی لئے وہ طرح طرح کے بہانے بنا رہے تھے جن کا تذکرہ سوره احزاب کی آیت نمبر ١٣ میں موجود ہے.

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *