انشاء اللہ بیٹا ہی پیدا ہوگا ،100 فیصد گارنٹی

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ! گھر گھر میں تقریبا لڑائی کی وجہ یہی رہتی ہے کہ جہاں تم نے اتنی بچیاں پیدا کی وہاں پر لڑکا بھی پیدا کرو خاص طور پر اس لڑائی کا ایوارڈ جاتا ہے ساس ماں کو ساس ماں بہو کو کہتی ہے کہ مجھے پوتا چاہئے حالانکہ اس بات کو ساس بخوبی جانتی اور سمجھتی ہے

کہ اولاد دینا اللہ عزوجل کا کام ہے ۔ اس میں اس بیچاری عورت کا دخل نہیں اگر اس عورت کا دخل ہوتا تو وہ ضرور اپنی ساس کی مرضی کے مطابق بچوں کو جنم دیتی اس لڑائی نے تو لاکھوں کی تعداد میں گھروں کو اجاڑ کر رکھ دیا اس لڑائی سے وابستہ لوگ جاہل احمق اور بداخلاقی کے تاجدار ہوتے ہیں ورنہ ایک پڑھالکھا انسان خوف خدا رکھنے والا انسان اس طرح کی لڑائی اپنی بیوی سے کبھی نہیں لے سکتا۔ان ساسوں کو مشورہ ہے کہ جو پوتا نہ ملنے پر بہو سے لڑائی کرتی ہیں وہ اپنی بہو سے لڑنے کی بجائے اللہ عزوجل کی بارگاہ میں دعا کریں ۔ جس کے بس میں یہ سارے معاملات ہیں۔اس تحریر میں ایک وظیفہ شیئر کیاجارہا ہے جس کے عمل کرنے سے انشاء اللہ بیٹا ہی پیدا ہوگا ۔یہ وظیفہ کرنے کے لئے کوئی بھی اجازتی شرائط لاگونہیں ہیں ۔ اس وظیفہ کے دلائل اور حوالہ جات بھی نیچے درج ہوں گے۔ مثلاً کس کتاب میں اس وظیفہ کو لکھا گیا اور کن بزرگوں نے لکھا اور ان بزرگوں کا دین اسلام کے ساتھ کتنا گہرا تعلق ہے ۔وظائف میں بزرگوں کی روحانیت بھی پوری پوری میسر ہوتی ہے ۔وظیفہ کرنے کا آسان طریقہ یہ ہے کہ جب حمل کا پہلا مہینہ ہو۔

اس مہینہ میں کسی بھی دن شوہر اپنی بیوی کی سیدھی پسلی پر لاالہ الااللہ لکھ دے اور یاد رہے کہ یہ کلمات کسی سیاہی یا قلم وغیرہ سے نہیں لکھنے بلکہ شوہر اپنی شہادت کی انگلی سے خود لکھے اور نیت کرے کہ بیٹا پیدا ہوا تو میں اسے نیک تربیت بناؤں گا اوراسے اللہ عزوجل کی بتائی ہوئی راہ یعنی صراط مستقیم پر چلاؤں گا انشاء اللہ اگر اللہ نے چاہا تو اس عمل کرنے سے بیٹا ہی پیدا ہوگا ۔شکریہ

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *