مان باپ کوراضی کرناہے تو یہ وظیفہ پڑھیں

میں اپنی ماں باپ کی بہت عزت کرتی ہوں اوربہت احترام اور بہت پیار کرتی ہوں، کسی وجہ سے یہ پتا نہیں کسی کی نظر لگی ہے کہ ماں باپ کبھی مجھ سے ناراض ہوجاتے ہیں اور کبھی راضی۔ آپ کوئی وظیفہ یا دعا بتائیں تاکہ وہ ہمیشہ خوش ہوجائیں اورہمارے مسائل ٹھیک ہوجائیں۔ اب صرف وظیفہ یا دعا ہی کام آسکتی ہے

اور اللہ تعالی کی مدد ۔السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ باب البر والصلۃ کی چوتھی حدیث درج ذیل ہے وعن عبد اللہ بن عمرو بن العاص رضی اللہ عنھما عن النبی ﷺ قال رضی اللہ فی رضی الوالدین وسخط اللہ فی سخط الوالدین (اخرجہ الترمذی وصححہ الحاکم وبن حبان) عبد اللہ بن عمرو بن عاص روایت کرتے ہیں کہ نبی اکرم ﷺ نے فرمایا اللہ کا راضی ہونا ماں باپ کے راضی ہونے میں ہےاور اللہ کا ناراض ہونا ماں باپ کے ناراض ہونے میں ہے۔
اسے ترمذی نے روایت کیا اور ابن حبان اور حاکم نے صحیح کہا اس حدیث سے معلوم ہوا کہ والدین کو راضی کرنا فرض ہے اور انھیں ناراض کرنا حرام ہے ۔۔۔کیونکہ ان کی رضا میں اللہ کی رضا اور ان کی ناراضگی میں اللہ کی ناراضگی ہے ۔۔۔اللہ تعالی نے قرآن مجید میں اپنے حق کے ساتھ والدین کا حق ملا کر ذکر فرمایا ان اشکر لی ولوالدیک میرا اور اپنے ماں باپ کا شکر ادا کر والدین کا حکم صرف اس صورت میں مانا جائے گا جب وہ اللہ کے حکم کے خلاف نہ ہو ۔۔۔گویا والدین کی اطاعت اللہ کی اطاعت کے تابع ہو ۔۔اگر اللہ کی نافرمانی ہوتی ہو تو والدین کا حکم نہیں مانا جائے گا۔۔۔ مثلا

والدین ایسا کام کرنے کا حکم دیں جس سے اللہ تعالی نے منع فرمایا ہو یا ایسے کام سے روکیں جو اللہ نے فرض کیا ہو تو ان کی بات نہیں مانی جائے گیحضرت علی سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے فرمایاسوال:میں اپنی ماں باپ کی بہت عزت کرتی ہوں اوربہت احترام اور بہت پیار کرتی ہوں، کسی وجہ سے یہ پتا نہیں کسی کی نظر لگی ہے کہ ماں باپ کبھی مجھ سے ناراض ہوجاتے ہیں اور کبھی راضی۔ آپ کوئی وظیفہ یا دعا بتائیں تاکہ وہ ہمیشہ خوش ہوجائیں اورہمارے مسائل ٹھیک ہوجائیں۔ اب صرف وظیفہ یا دعا ہی کام آسکتی ہے اور اللہ تعالی کی مدد ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.