عورتیں کچن میں صرف تین بار سورہ قریش اللہ سات نسلوں تک رزق کی کمی نہیں ہونے دیں گے۔

آپ نے اکثر اوقات لوگوں کو یہ کہتے ہوئے سنا ہو گا کہ ہمارے رزق میں برکت نہیں پیسے بچتے نہیں بچت نہیں ہوتی رزق ختم ہوجاتا ہے مہینہ ختم ہونے سے پہلے تنخواہ ختم ہوجاتی ہے ۔ یہ اس وقت کا سب سے بڑا مسئلہ ہے اس تحریر میں رزق میں برکت کے لئے اور ہر بیماری سے شفاء کے لئے پیش کیا جارہا ہے

اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ کے گھرمیں کبھی بھی رزق کی تنگی نہ ہو اور پورا گھر ہر طرح کی بیماری سے محفوظ رہے تو آپ اس عمل کو لازمی کرلیں انشاء اللہ تعالیٰ آپ کو یقینا اس کا فائدہ ہوگا ۔ یہ جو وظیفہ بتایا جارہا ہے یہ وظیفہ خاص طور پر عورتوں کے لئے ہے جب بھی آپ صبح کا کھانا یا ناشتہ بنانے کے لئے باورچی خانے میں جائیں تو کھانا بنانے سے پہلے آپ نے تین مرتبہ سورہ قریش پڑھنی ہے پھر ایک مرتبہ بسم اللہ الذی لا یضر مع اسمہ شیئ فی الارض ولا فی السماء وھوالسمیع العلیم یہ دعا پڑھ کر پورے کچن میں دم کر دینا ہے اور اس عمل کو آپ نے اپنی زندگی کا معمول بنا لینا ہے ہر روز ایسے ہی کرنا ہے اس عمل کو پڑھنے سے اللہ ہر طرح کی بڑی سے بڑی بیماری سے آپ کے پورے گھر کو محفوظ رکھے گا آپ کے گھر سے کبھی بھی رزق ختم نہیں ہوگا اللہ اپنے غیبی خزانوں سے نوازے گا اور آپ کے گھر میں ہمیشہ برکت رہے گی ۔اس عمل کو آپ نے پورے یقین کے ساتھ کرنا ہے وظیفہ جیسے بتایا ہے ویسے ہی کرنا ہے پھر انشاء اللہ آپ کو ضرور فائدہ ہو گا ۔حضرت حسن بصری فرماتے ہیں: مجھے یہ حدیث

پہنچی ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: اللہ تعالیٰ سو رحمتوں کا مالک ہے، اُس نے (اُن میں سے) ایک رحمت کو جمیع اہلِ زمین کے درمیان تقسیم کر دیا جو اُن کی اموات تک انہیں اپنے احاطہ میں لئے رہے گی جبکہ اس نے باقی ننانوے رحمتوں کو اپنے اولیاء کے لئے ذخیرہ کر لیا۔ اللہ تعالیٰ اہلِ دنیا پر تقسیم ہونے والی رحمت اور (باقی) ننانوے رحمتوں کو اپنے قبضے میں کرنے والا ہے پھر وہ قیامت کے دن اپنے اولیاء پر اِن سو رحمتوں کی تکمیل کرے گا (اور ان رحمتوں کے باعث انہیں اعلیٰ و ارفع مقامات اور حقِ شفاعت سے نوازے گا)۔ حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے حضورنبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: اللہ تعالیٰ نے سو رحمتیں پیدا کیں ایک رحمت اپنی مخلوق کے درمیان رکھی جس سے وہ ایک دوسرے پر رحم کرتے ہیں جبکہ ننانوے رحمتیں اللہ تعالیٰ کے پاس ہیں۔حضرت عبادہ بن صامت رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: ہمارے رب نے اپنی رحمت کو سو اجزاء میں تقسیم کیا پھر ان میں سے ایک جزو کو زمین پر اُتارا۔ یہی وہ جزوِ رحمت ہے جس کی وجہ سے انسان، پرندے اور درندے باہم شفقت و رحمت کرتے ہیں، باقی ننانوے رحمتیں اس کے پاس قیامت کے دن اپنے بندوں کے لئے محفوظ ہیں۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.