حائضہ بیوی سے اس طرح قربت کر یں گے تو

عورت اگر حالت ِ ح ی ض میں ہو اور شوہر چاہتا ہو کہ وہ قربت کر ے اس صورت میں شوہر اپنی بیوی سے کیسے ازدواجی تعلق قائم کر سکتا ہے تا کہ گ ن ا ہ بھی نہ ہو اور مقصد بھی پوا ہو جا ئے آج ہم تمام باتیں ہم آپ کے سامنے کریں گے جن کو سن کر یقیناً آپ کے ذہن میں جو غلط قسم کی باتیں ہوں گی

وہ ختم ہو جا ئیں گی۔ وہ دور ہو جائیں گی اور انشاء اللہ حقیقی علم کا آپ کو پتہ لگ جا ئے گا عرب کے اندر جب عورت کو ح ی ض آتا تھا تو عورت کو یہ کہا جا تا ہے کہ آپ نے کھا نا بھی نہیں پکا نا آپ نے ہمارے ساتھ کھا نا بھی نہیں کھا نا بلکہ بعض جگہ آتا ہے کہ عورت کو کمرے میں بند کر دیا جا تا تھا اتنا ظلم کیا جا تا تھا جب یہ بات آپﷺ کو پتہ چلی تو آپ نے فر ما یا کہ یہ بات غلط ہے صحابہ نے بھی کہا یہ غلط ہے آتا ہے کہ سورۃ بقرہ کی یہ آیت اس میں اللہ رب ا لعزت ارشاد فر ما تے ہیں کہ جب یہ لوگ آپ سے سوال کر تے ہیں ح ی ض کے بارے میں میں نے آپ سے کہا نا کہ حالتِ ح ی ض میں عورت کے قریب کس طرح جا سکتے ہیں تو اللہ نے کہا کہ یہ لوگ آپ سے ح ی ض کے بارے میں سوال کر تے ہیں۔ گندگی ہے یہ۔ جب عورت حالتِ ح ی ض میں ہو۔ اس سے دور رہا کرو اس کے قریب نہ جا یا کرو۔ اللہ کے نبی نے فر ما یا کہ اس سے قربت نہیں کر نی۔

باقی اس کے ساتھ بیٹھ بھی سکتے ہو کھا نا بھی کھا سکتے ہیں لیٹ بھی سکتے ہو آپس میں بوسا لے سکتے ہیں ایک دوسرے کے جسم سے کھیل بھی سکتے ہیں صرف یہ ہے جب یہ بات پوری سماعت فر ما ئی جب یہ بات یہودیوں کو پتہ چلی کہ یہ بات کہی ہے تو اس صورت میں کچھ لوگ اللہ کے نبی کے پاس آ ئے اور کہنے لگے کہ یہودی اس طرح کی باتیں کر رہے ہیں کہ ہم حالتِ ح ی ض میں اپنی بیوی سے قربت کر نہ لیا کر یں۔ اللہ کے نبی کا رنگ جو ہے سرخ ہو گیا غصے میں آ گئے۔

تو فرما یا کہ یہ بڑا سخت گ ن ا ہ ہے اس طرح کر نا ہے حالتِ ح ی ض میں طب کے حساب سے بھی قربت نہیں کر سکتے آپ کسی سے بھی پوچھ لیجئے۔ قرآن نے جس چیز سے منع کیا ہے یہ کوئی عام بات نہیں ہے اس میں نقصان ہے۔ اس میں بہت ہی زیادہ نقصان ہے اس سے کئی قسم کی بیماریاں لگ سکتی ہیں شوہر کو بیوی کے ذریعے اس لیے حالتِ ح ی ض میں قربت سے منع فر ما یا گیا ہے

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.