اونٹنی کے دودھ کے حیرت انگیز کمالات

اونٹنی کا دودھ خاندان بھر کی صحت کا ضامن ہے اور اونٹنی کا دودھ انتہائی زود اثر ہے اور فوری توانا ئی مہیا کرتا ہے ضعیف کمزور اور بوڑھے لوگوں کے لئے اس دودھ کا استعمال بے حد فائدہ مند ہے اور طب نبوی ﷺ کا تجویز کردہ علاج اونٹنی کا دودھ غذا بھی ہے اور دوا بھی ہے اس میں صحت بھی ہے

عافیت بھی ہے اور شفا بھی ہے اور موجودہ دور کے نامور غیر مسلم محقق یاگیر نے اعتراف کیا ہے کہ اونٹنی کے دودھ کی طبی اہمیت کا اندازہ سب سے پہلے مسلمانوں کے پیغمبر محمد ﷺ کو تھازمانہ قدیم کی طرح عصر حاضر میں بھی صحرائی لوگ اسے بنیادی غذا کے طور پر اسے استعمال کرتے ہیں اور عرب اونٹنی کے دودھ کو متعدد بیماریوں کے لئے تریاق خیال کرتے ہیں عرب سکالر امام رازی اور حکیم ابن سینا کے مطابق یہ دودھ دماغی کیفیات مزاج کے بگاڑ معدے کی تیزابیت اور دیگر تکالیف اور جگر کے امراض کا بہترین علاج ہے کیونکہ اونٹنی کا دودھ انتہائی بے ضرر انداز میں کام کرتا ہے ہیپاٹائٹس پیلیا یر قان کے علاوہ جسم کے اندرونی اعضاء کے ورم کے لئے اس کا استعمال نہایت مفید ہے اور جدید تحقیقات کے مطابق اونٹنی کے دودھ میں کینسر سے شفایابی کے عناصر بھی موجود ہیں اور اس کے علاوہ یہ دودھ متعدد بیماریوں مثلا استسقاء جس میں پیٹ

میں پانی بھرجاتا ہے اور ٹی بی دمہ پیٹ کے تمام امراض قبض بواسیر معدے کی تیزابیت جگر کی گرمی تلی کے مسائل اور متعدد دیگر امراض کا موثر علاج ہے اونٹنی کے دودھ میں شامل خاص معالجاتی عناصر اور پروٹینز انتہائی خطر ناک اور وبائی امراض میں حفاظتی اور دفاعی حصار کےطور پر کام کرتے ہیں اور اس دودھ میں شامل جراثیم کش عناصر بیماریوں سے بچاؤ میں اہم کردار ادا کرتے ہیں اور قوت مدافعت میں اضافہ کرتے ہیں اونٹنی کے دودھ کے ایک لیٹر میں تقریبا باون یونٹ انسولین شامل ہوتے ہیں اور اس کے علاوہ دیگر کئی خصوصیات کی بنا پر اس دودھ کا مستقل استعمال شوگر کے مریضوں کے لئے انتہائی فائدہ مند ہے ذہنی طور پر معذوری کا شکار بچوں کے لئے بہترین قدرتی دوا ہے اور ماں کے دودھ کے قریب ترین ہونے کی وجہ سے شیر خوار بچوں کے لئے بہترین غذا ہے اور متعدد عرب ممالک میں مائیں اپنے بچوں کو ماں کے دودھ کے نعم البدل کے طور پر اور متعدد امراض سے بچاؤ کے لئے اونٹنی کا دودھ استعمال کراتی ہیں حاملہ خواتین اور دودھ پلانے والی خواتین کے لئے انتہائی مفید ترین

ہے اور طویل بیماری کے بعد جلدی بحالی صحت کے لئے ہائی پاور اینٹی بائیوٹک ادویات کے مضر اثرات سے بچاؤ اور کیمو تھراپی کے عمل سے گزرنے والے مریضوں کے لئے اونٹنی کا دودھ حفاظتی حصار کے طور پر کام کرتا ہے اور کیمو تھراپی کے بعد اس کے مسائل کے حل کے لئے معاون ہے اونٹنی کا دودھ انتہائی زود اثر ہے اور فوری توانائی مہیا کرتا ہے ضعیف کمزور اور بوڑھے لوگوں کے لئے اونٹنی کا دودھ کا استعمال بے حد فائدہ مند ہے اور کولیسٹرول چکنائی کی برائے نام موجودگی کی وجہ سے یہ دودھ امراض قلب سے متاثر مریضوں کے لئے بالکل بھی نقصان نہیں دیتا بلکہ فائدہ مند ہے اس میں شامل معدنیات وٹامنز کی بنا پر تازہ پھلو ں اور سبزیوں کا بھی نعم البدل کہاجاتا ہے اونٹنی کا دودھ مکمل غذا ہے موٹاپے سے پریشان اس دودھ کے استعمال سے کچھ ہی عرصہ میں وزن کم کرسکتے ہیں اور اونٹنی کا دودھ ہڈیوں کی کمزوری بھی دور کرتا ہے اور انہیں مضبوط بناتا ہے۔اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *