حضرت علی نے فرمایا: یہ ایک لفظ تقدیر بد ل دے گا جو یہ سمجھتے ہیں ان کی حاجت کبھی پوری نہیں ہوگی ، خدا کی قسم ! معجزہ ہوجاتا ہے۔

ایک ایسا عمل جو انشاءاللہ آپ کو کرنے پر اللہ پاک ہر قسم کے مقصد کےلیے کامیاب کریں گے۔ ہرو ہ آرزو ، ہروہ تمنا جو آپ کبھی کرتے ہوں گے اپنی زندگی میں۔ اللہ پاک آپ کو ضرور حاصل کروا دیں گے۔ آپ کی دنیا بھی سنور جائے گی۔ آپ کی آخرت بھی سنور جائے گی۔ اگر دنیا کو جنت بنانا چاہتے

ہیں۔ اورآخرت کی جنت کے طلب گا ر ہیں۔انشاءاللہ توامید کرتے ہیں۔ آپ یہ عمل ضرور کریں گے۔ کیونکہ یہ عمل آپ کے لیے راہ نجات بن جائے گا۔ جب آپ اس کا ورد شروع کریں گے۔ جب آپ اس کا معمول بنائیں گے۔ انشاءاللہ اس کا پڑھنے والا کبھی بھی مایوس نہیں لوٹے گا۔ آج کا عمل بہت خا ص ہے جو کہ” لاالہ اللہ الااللہ محمد رسول اللہ “کے حوالے سے ہے ۔اس کے حوالے حضرت عثمان ؓفرماتے ہیں کہ میں نے نبی کریمﷺ سے سنتا تھا میں ایک ایسا کلمہ جانتا ہوں۔ جو شخص اس کو حق سمجھ کر اخلاص کے ساتھ ، دل سے یقین کرتے ہوئے پڑھے تو اس پر جہنم کی آگ حرام ہوگی۔ حضرت عمر نے فرمایا کہ میں بتاؤں وہ کلمہ کیا ہے ؟ وہی کلمہ ہے جس کے ساتھ اللہ پا ک نے اپنے رسول کو اور اس کے صحابہ کرام ؓکو عزت ، وہی تقوہ کا کلمہ ہے ۔ جس کی نبی کریم ﷺ کو اپنے چچا ابو طالب سے ان کے انتقال کے وقت اپنی خواہش کی ۔ وہ کلمہ “لا الہ اللہ الا اللہ محمد رسول اللہ” ہے۔ ایک دوسری روایت میں ہے کہ جب حضرت آدم ؑ کو جنت سے نکا ل کر اس دنیا میں بھیجا گیا تو وہ روتے رہتے تھے اور ہروقت استغفار کا ورد کرتے رہتے تھے۔

تو انہوں نے آسمان کی طرف منہ کرکے کہا : یااللہ میں محمد مصطفی ٰ ﷺ کے وسیلے سے تجھ سے مغفرت چاہتا ہوں۔ وحی نازل ہوئی محمد کون ہے؟ جس کے واسطے تم نے استغفار کی۔ جب آپ نے مجھے پیدا کیا تو میں نے عرش پر لکھاہوا دیکھا۔ “لاالہ اللہ الا اللہ محمد رسوال اللہ” ۔ میں سمجھ گیا کہ نبی کریمﷺ سے اونچی ہستی کوئی نہیں ہے۔ جن کانام آ پ نے اپنے نام کے ساتھ رکھا ہے۔ وحی نازل ہوئی وہ خاتم النبین ہیں۔ تمہاری اولا د میں سے ہیں۔ کہ وہ بھی نہ ہوتے تو تم بھی پیدا کیے جاتے۔ کیا خوبصورت کلمہ ہے۔ نبی کریمﷺ کا فرمان ہے کہ قیامت کے دن اللہ پا ک کا ارشاد ہے کہ جہنم سے ہر اس شخص کو نکالو جس نے” لاالہ اللہ الا اللہ محمد رسوال اللہ” پڑھا۔ آپ ﷺ کا ارشا دہے کہ” لاالہ اللہ الا اللہ محمد رسوال اللہ “جو کلمہ ہے یہ بہت پیارا کلمہ ہے۔ اس کےذریعے سے جو بھی رنجیدہ ہوں اور غمگین ہواللہ پاک سے مدد طلب کریں گے۔ انشاءاللہ ان کی ضرور مدد فرمائیں گے۔ اور ان کے ذریعے سے گناہوں کو ختم فرمادیتےہیں۔ آپ نے کرنا کیا ہے ؟ بہت آسان سا عمل ہے۔ اکابرین کا کہنا ہے کہ آپ نے اس کلمہ اپنی زندگی میں کم از کم ستر ہزار مرتبہ تو ضرور پڑھنا ہے۔ آپ نے یہ عمل آج سے شروع کردینا ہے اس کو اپنی زندگی میں ایک مرتبہ ستر ہزار مرتبہ ضرور پڑھنا ہے۔ اور آخرت کےلیے بہت ذخیر ہ بن جائے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.