قرآن کا یہ وظیفہ دنیا کی ہر بیماری کا علاج، ڈاکٹر کی گولی کھانی پڑے گی نہ آپریشن کی ضرورت ہوگی ، لاعلاج مریض پڑھیں

قرآن مجید کی تلاوت کو اپنی زندگی میں ہمیشہ کے لئے شامل کر لیں چین نہیں آنا چاہئے جب تک قرآن نہ پڑھیں سمجھ لیں وہ دن ضائع ہوگیا زندگی کا جس دن میں قرآن نہیں پڑھا وننزل من القرآن ماھو شفاء و رحمۃ للمومنین ولا یزید الظالمین الا خسارا آپ کی جسمانی بیماریوں کی شفا ء بھی قرآن ہے لما فی الصدو قلبی

بیماریوں کی شفاء بھی قرآن ہے معاشرتی بیماریوں کی شفا بھی قرآن ہے جب اللہ نے اسے شفاء کا مرکز ہی بنا دیا ہے دنیا جہان کی ہر بیماری کا علاج اللہ نے قرآن میں رکھا ہے لیکن یقین شرط ہے یقین شرط ہے کڑیوں میں باندھا ہوا انسان جکڑا ہوا وہ انسان دیوانہ انسان لایا گیا صحابی نے سورۃ الفاتحہ پڑھ کر دم کیا اور اس طرح ٹھیک ہوگیا جیسے گرہ بندھی تھی کھل گئی ہے یقین شرط ہے بچھو کا ڈسا ہوا انسان لایا گیا صحابی وہ میں عامل بابوں کی بات نہیں کررہا قرآن سے محبت کرنے والوں کی بات کررہا ہوں۔ وہ جو کہتا ہیں نا بکرا بھی کالا ہونا چاہئے رات کے دو بج کر گیارہ منٹ ہونے چاہئے بارہ نہیں ہونے چاہئے اور آپ کسی قبر کو کھود کر نعوذ باللہ اس میں قدم رکھے ہوئے ہو ں اور سر پر آپ نے کالا کپڑا رکھا ہو ایسی ذلالت سے اللہ اس امت کو محفوظ فرمائے۔سچ کہا تھا اللہ کے رسول ﷺ نے جو کسی نجومی کے پاس کسی کاہن کے پاس جاتا ہے یا کسی پالمسٹ کے پاس جا کر ہاتھ دکھاتا ہے اس کی بات مانے یا نہ مانے صرف دکھانے سے ہی چالیس دن تک اس کی عبادت قبول نہیں ہوتی اور اگر اس

کی بات کو مان لے جو وہ کہہ رہا ہے تو اس نے اس قرآن کا انکار کر دیا جو محمد مصطفیٰ ﷺ پر نازل کیا گیا۔یہ قرآن شفاء ہے یہ صرف شفاء نہیں ہے تمہیں اللہ کی رحمت کا مستحق بنادے گا۔تمام الہامی کتب سے بڑھ کر عزو شرف والی کتاب، عظمت اور فضیلت والی کتاب، خیر و برکت سے مالامال، ہدایت اور حکمت سے لبریز، شک و شبہ سے بالاتر، حق و باطل میں فرق کرنے والی، جہالت کے اندھیروں سے نکال کر توحید کے نور سے منور کرنے والی۔ ایمان لانے والوں کو جنت کی بشارت دینے والی اور انکار کرنے والوں کو جہنم سے ڈرانے والی، بنی نوع انسان کے لئے سب سے بڑی نعمت۔۔۔ قرآن مجید، اللہ سبحانہ و تعالی کا کلام، جس رات نازل ہوا، اس رات کی عبادت ہزار مہینے (یا 83 سال) کی عبادت سے افضل قرار دی گئی۔ (سورۃ القدر، آیت نمبر 1 تا 3) قرآن مجید کی فضیلت میں اگر صرف یہی ایک آیت نازل کی گئی ہوتی تب بھی قرآن مجید کی عظمت اور فضیلت کے لئے کافی تھی، لیکن رسول اکرمﷺ نے قرآن مجید کے فضائل اور فیوض و برکات کے بارے میں جو احادیث مبارکہ ارشاد فرمائیں ہیں وہ اتنی زیادہ ہیں کہ اس نعمت عظمی کا شکر ادا کرنے کے لئے امت محمدیہ کا ہر فرد اگر ساری زندگی اللہ تعالی کے حضور سجدے میں گزار دے تب بھی حق شکر ادا نہیں ہوتا۔ اللہ ہم سب کا حامی و ناصرہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.