ایسی چیز ہے جس کو کھانے سےمردانہ طاقت 80 گنا زیادہ ہوجاتی ہے

آج ہم آپکو لوگوں کے جن، سی تعلیم اور مسائل سے آگاہ کریں گے ۔ آج بھی اللہ پاک کی نعمت سے ایک ایسے مسئلہ کا حل لے کر آئے ہیں۔ ایک ایسی چیزجس کو کھانے سے مردانہ طاقت میں بیس فیصد اضافہ ہوجاتا ہے۔ اور سائنسدانوں نے مردوں کو یہ اپنی غذا میں شامل کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ خشک میوہ جات متعد د فوائد سے آگاہ ہیں۔ تاہم سائنسدانوں نے مردوں کے لیے ان کا ایک ایسا حیران کن فائدہ بتادیا ہے۔ کہ سن کر ہر

مردانہیں اپنی خوراک کا باقاعدہ حساب بنا لے گا۔ آن لائن ویب سائٹس کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ بادام اور اخروٹ مردانہ طاقت میں اضافہ کے لیے انتہائی طاقت ور اور مفید ہوتے ہیں۔ ایک نئی تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ روزانہ مٹھی بھریعنی ساٹھ بادام ، اخروٹ کھانے سے مردوں کی طاقت میں بیس فیصد اضافہ ہوجاتاہے۔ سپین کی Rovira i Virgili Universityکے سائنسدانوں نے ایک تحقیق میں اٹھارہ سے پندرہ سا ل عمر کے ایک سو انیس مردوں پر تجربات کیے ۔

انہوں مردوں کی طاقت کے ٹیسٹ کیے ۔ پھر ان کو دو گروپوں میں تقسیم کرکے ، ایک کو چودہ ہفتےتک روزانہ ساٹھ گرام بادام، اخروٹ کھانے کو کہا جبکہ دوسرے گروپ کو اپنی معمول کی خوراک جاری رکھنے کی ہدایت کی۔ چودہ ہفتے بعد جب ان کے دوبارہ ٹیسٹ کیے گئے تو معلوم ہوا کہ جس گروپ کے مرد جو خشک میوہ جات کھاتے رہے ان میں سپر مز کی تعداد سولہ فیصد زیادہ ہوچکی تھی۔ ان کے علاوہ ان کے سپر مزکے متحرک ہونے میں چھ فیصد اوران کے زندہ رہنے میں چارفیصد اضافہ ہو ا۔ اور ان کی ہئیت میں بھی ایک فیصد اضافہ ہوگیا۔ تحقیقی کے سربراہ ڈاکٹر البرٹ ہیورڈ کاکہنا تھاکہ خشک میوہ جات میں اومیگا تھری ، فیٹی ایسڈز، اینٹی آکسیڈینٹ اور فولک پائے جاتے ہیں۔ جو مردوں کے سپر مز اوران کی صحت کے لیے انتہائی مفید ہوتے ہیں۔

ایسے مرد جن کو اولاد کے حصو ل کے لیے مشکل کا سامنا ہے۔ ان کو چاہیے کہ وہ ان میوہ جات کو اپنی غذا کا لازمی جزو بنالیں۔ مردانہ طاقت کو بڑھانے کا طریقہ بتانے جا رہا ہوں ۔۔میں آپ کو آٹھ ایسے طریقے بتائوں گا ۔۔سب سے پہلی بات یہ کے اپنے دماغ میں مردانہ کمزوری کو نہ رکھئیے ۔ اگر آپ مردانہ کمزوری کا شکار بھی ہے تو یہ نہ سوچا

کرنے کے آپ سے بیماری میں متبلا ہیں ۔اور یہ بھی نہ سوچا کریں کہ میں مردانہ کمزوری کی وجہ سے شادی کے لالق نہیں ہوں ۔آپ یہ سوچئیے کہ آپ ایک تندرست اور طاقتور انسان ہیں ۔یہ خیال اپنے دماغ میں رکھنا ہے ۔دوسرا یہ کے ہر وقت کے تصور سے دُور رہنا ہے نہ کے اکثر کسی خوبصورت لڑکی کو دیکھتا ہے یہ پھر کوئی اسی طرح کی فلم دیکھتا ہے ۔ یا پھر کوئی بھی تصویر ہی گزر جاتی ہے ۔پھر انسان سوچتا ہے کہ میں اس کے ساتھ یہ صحبت کروں تو اس خیال سے اپنے آپ کو دُور رکھئیے ۔یہ تھی دوسری بات اب تیسری بات ہے ۔

اپنے اندر خود اعتمادی پیدا کریں اور پریشانی کو اپنے پاس نہ آنے دیں ۔انسان جب تک خوداعتمادی رکھتا ہے وہ صحت مند رہتا ہے ۔جو وہ خوداعتمادی نہیں کرتا تو دنیا کی ساری بیماریاں اُس پر اثر کرتی ہیں ۔اس کے ساتھ ساتھ ساری پریشانی بھی اس پر اثر انداز ہوتی ہیں۔اس کی وجہ سے انسان بیماری میں پڑجاتا ہے اور اس کی وجہ سے اُس کی مرادنہ طاقت جاتی رہتی ہے ۔۔ اُس کا دماغ ہی خوداعتمادی کے قابل نہیں رہتا ۔چوتھی بات گرم اشیائے اورگرم مصالعے جو کے ہم کھانوں میں کھاتے ہیں اور ہم تیز معاملہ کھاتے ہیں۔آپ تیز مرچوں والے کھانوں کو ترک کردیں ۔آپ کھلی ہوا اور سورج کی دھوپ سے فائدہ اٹھانے سورچ کی دُھوپ انسان کے جسم کے انداز جتنے سپرم ہیں اُن کو طاقتور بتاتی ہے ۔ جو انسان اپنے اُوپر وہم کو تاری کرتا ہے اُس کی وجہ سے بھی انسان کی مردانہ طاقت میں کمزوری آتی ہے ۔وہ وہم یہ ہوتا ہے کہ میں اپنی بیوی کے ساتھ ہمبستری کروںگا ۔تو میری تو اتنی ٹاٹمنگ نہیں ہے یہ ہوتا ہے انسان کو وہ وہم جس کی وجہ سے وہ کمزور پڑتا ہے ۔پانچ وقت کی نماز اور ہلکی ورزش کریں ۔یہ سب باتیں اگر آپ اپنے دماغ میں رکھیں گےتو آپ کو کبھی بھی مردانہ کمزوری کا ڈر نہیں ہوگا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.