تین حلقوں میں کس کو برتری حاصل ہے؟عوام کیلئے ناقابل یقین خبر ،یقین کرنا مشکل

تین حلقوں میں کس کو برتری حاصل ہے؟عوام کیلئے ناقابل یقین خبر ،یقین کرنا مشکلاسلام آباد (ویب ڈیسک) آج پنجاب اور خیبر پختونخوا میں چار حلقوں پر الیکشن کیلئے دنگل سجا، ان میں سے دو قومی جبکہ دو صوبائی اسمبلی کی نشستیں ہیں۔ اب تک کے موصول ہونے والے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق چار میں سے تین حلقوں پر حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدواروں کو برتری حاصل ہے جبکہ ایک حلقے میں پاکستان مسلم لیگ ن کا امیدوار

آگے ہے۔نجی ٹی وی سما کے مطابق پنجاب سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 75 ڈسکہ کے 21 پولنگ سٹیشنز کا غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجہ موصول ہوگیا ہے جس کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار علی اسجد ملہی 6958 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کی امیدوار نوشین افتخار 5279 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔پنجاب سے صوبائی اسمبلی کے حلقے پی پی 51 میں بھی تحریک انصاف کے امیدوار کو برتری حاصل ہے۔ یہاں سے موصول ہونے والے 23 پولنگ سٹیشنز کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے چوہدری یوسف7004 ووٹ لے کر پہلے جبکہ مسلم لیگ ن کی امیدوار طلعت شوکت 6912 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔خیبر پختونخوا میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 45 کرم میں بھی تحریک انصاف کو برتری حاصل ہے۔ یہاں سے موصول ہونے والے 33 پولنگ سٹیشنز کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے فخر زمان 3332 ووٹ لے کر آگے جبکہ آزاد امیدوار سید جمال 3006 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔ جمعیت علما اسلام کے امیدوار محمد جمیل چمکنی اس حلقے میں 1889 ووٹوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہیں۔صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی کے 63 نوشہرہ کے 18 پولنگ سٹیشنز کے موصول ہونے والے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق یہاں مسلم لیگ ن کے امیدوار کو برتری حاصل ہے۔ اس حلقے میں ن لیگ کے اختیار ولی 3580 پہلے جبکہ تحریک انصاف کے میاں محمد عمر 2938 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.