طریقہ کار تبدیل! دُبئی جانے کے خواہشمند افراد کے لیے اہم خبر، اب ویزہ کیسے ملے گا؟

دُبئی(نیوز ڈیسک) دُبئی نے ویزہ جاری کرنے کے لیے ایک نئی شرط کا اعلان کر دیا۔ ویزہ جاری کرنے والے ادارے دُبئی جنرل ڈائریکٹوریٹ آف ریزیڈنسی اینڈ فارنرز افیئرز (GDRFA)کی جانب سے ویزہ حاصل کرنے کے لیے ایک نئی شرط عائد کی گئی ہے۔ GDRFA کا کہنا ہے کہ دُبئی میں مقیم افراد کے لیے اعلان کیا گیا ہے کہ آئندہ سے ویزہ کے حصول کے لیے میڈیکل ٹیسٹ کی رپورٹ آن لائن بھجوانی ہو گی۔

GDRFA کے دفاتر میں میڈیکل ٹیسٹ کی رپورٹ وصول نہیں کی جائے گی۔یہ نئی شرط 14 فروری 2021ء سے لاگوہو جائے گی۔ عام طور پرلوگوں کو ویزہ حاصل کرنے کے سلسلے میں میڈیکل رپورٹ کا پرنٹ آؤٹ GDRFA کو جمع کروانا پڑتا ہے۔ ڈیلی گلف اُردو کے مطابق اب یہ دہائیوں پُرانا طریقہ کار ختم کیا جا رہا ہے۔ 14 فروری سے GDRFA کی جانب سے ایک آن لائن لنک جاری کر دیا جائے گا، جس کے بعد کاغذی صورت میں میڈیکل ٹیسٹ کی رپورٹ وصول نہیں کی جائے گی۔ بلکہ اس آن لائن لنک پر جا کر ہی میڈیکل ٹیسٹ کی رپورٹ سبمٹ کرنا پڑے گی۔ ادارے کا کہنا ہے کہ اس نئی شرط کا اطلاق ویزہ پراسس کے میڈیکل ٹیسٹ کے مرحلے کوڈیجیٹل بنانا ہے۔ کیونکہ دُبئی کے تمام سرکاری اداروں میں کاغذ کے ذریعے ہونے والی کارروائی کو آہستہ آہستہ ختم کیا جا رہا ہے اور تمام تر پراسسز آن لائن ہو رہے ہیں۔ دُبئی حکومت نے ہدف مقرر کر رکھا ہے کہ 2021ء کے بعد کسی بھی سرکاری ادارے کے ملازمین اور صارفین نہ تو کوئی کاغذ وصول کریں گے اور نہ ہی کوئی کاغذ مہیا کریں گے۔ تمام تر کارروائی آن لائن ہی انجام دی جائے گی۔ دُبئی حکومت کا کہنا ہے کہ دفاتر اور دیگر سرگرمیوں و کارروائیوں میں کاغذ کا استعمال ختم ہونے سے سالانہ ایک ارب کاغذات پر اٹھنے والے بھاری اخراجات بھی ختم ہو جائیں گے جس سے حکومت کی بڑی بچت ہو گی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.