ٹرمپ نے کو کس چیز کا علم تھا سابق امریکی صدر نے عمران خان کو ثالثی کی پیشکش کیوں کی تھی ؟ حیرت انگیز انکشافات

نجی ٹی وی پروگرام میں ن لیگ کے رہنما جاوید لطیف نے کہا کہ بھارت میز پر بیٹھنے کیلئے تیارنہیں عمران خان مسلسل مذاکرات کی پیشکش کررہےہیں۔ رہنما مسلم لیگ نون میاں جاوید لطیف نےکہا کہ 5فروری کو قوم کو یکجہتی کی ضرورت تھی لیکن وزیراعظم کی انا بیچ میں آگئی۔ بھارت مذاکرات کی میزپر بیٹھنے کیلئے

تیار نہیں ہوگا لیکن عمران خان انہیں مسلسل مذاکرات کی پیشکش کررہے ہیں ۔عمران خان اور شیخ رشید لوگوں کو اداروں کے سامنے کھڑا کرنے کیلئے اکسارہے ہیں ۔ٹرمپ کو معلوم تھا کہ بھارت کشمیر ہڑپ کرنے والا اس لئے سابق امریکی صدر نے عمران خان کو ثالثی کی پیش کش کی ۔ مقبوضہ کشمیر میں دوسال سے ظلم کا بازار گرم ہے لیکن حکومت کے پاس بھارت کی ہٹ

دھرمی کا دومنٹ کی خاموشی کے سواکوئی علاج نہیں ہے ۔اگر حکومتی کارکردگی اچھی ہوتی تو ہماری آواز پر عوام باہر نہ نکلتے۔ جمعرات کی میٹنگ میں قوم کے اعتماد سے اہم فیصلے ہوئے ۔فروری میں مہنگائی مارچ کریں گے مارچ میں لانگ مارچ ہوگا ۔فیصلہ ہوچکا ہے مرحلہ

وار آگے بڑھیں گے عوام کو نااہل حکمرانوں کے ہاتھوں میں کھلونا نہیں بننے دیں گے ۔مارچ اپنا ہدف پورا کئے بغیر ختم نہیں ہوگا ۔اگر حکومت کو آئینی طریقے سے ہٹایا جاسکتا ہے تو پیپلزپارٹی بتائے ۔شفاف الیکشن ہوں گے تو پیپلزپارٹی دوبارہ سندھ میں حکومت بناسکتی ہے ۔72سال میں جو کچھ ہوتا رہا بار بار ایسا نہیں ہونا چاہئے ۔عدم اعتمادکی تحریک کے معاملے پر اتفاق نہیں ہے ۔پاکستان کی تاریخ گواہ ہے جب تک غیبی مدد نہ ہوعدم اعتماد کی تحریک کامیاب نہیں ہوتی ۔شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ چائے پینے کے لئے راولپنڈی کارخ کیوں نہیں کررہے کوئی سنجیدہ وزیرداخلہ ایسی بات نہیں کرسکتا ۔وہ بار بار کہتے ہیں میں گیٹ نمبر چار کی پیداوار ہوں لیکن اس کاکوئی جواب نہیں آتا ۔حکومت اداروں کواپنے تحفظ کیلئے استعمال کررہی ہے ۔اپنی نااہلی کو اداروں پر ڈالنے کی کوشش کامیاب نہیں ہوگی ۔ہماری جدوجہد نظام کو نقصان پہنچانے والوں کیخلاف ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.