بختاور بھٹو کی شادی ۔۔ ان کے لباس پر کیا لکھا تھا؟جیالوں کیلئے شاندار خبر

بختاور بھٹو کی شادی ۔۔ ان کے لباس پر لکھا تھا؟جیالوں کیلئے شاندار خبر کراچی(نیوز ڈیسک)شہید محترمہ بنظیر بھٹو کی بڑی صاحبزادی بختاور بھٹو کی شادی محمود چوہدری کے ساتھ گزشتہ ہفتے سرانجام پائی۔بختاور بھٹو زرداری 29 جنوری کو شادی کے بندھن میں بندھ گئی تھیں جس کے بعد نکاح کی تصویریں سوشل میڈیا پر وائرل ہوئیں تاہم اب بختاور

کے مہندی کی تصاویربھی سامنےآگئیں جو خود بختاور نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر پوسٹ کیں۔بختاور بھٹو کی منگی کے چند روز بعد ہی ان کے مہندی کے لباس کے حوالے سے قیاس آرائیاں کی جاری تھیں تاہم اب بختاور نے خود اپنی مہندی کی تصاویر جاری کردی ہیں۔تصاویر پوسٹ کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ ان کی رسم حنا کی تقریب 27 جنوری کو ہوئی تھی جس کے لیے ان کا لباس ڈیزائنر زارا شاہجہاں نے تیار کیا تھا۔پی پی رہنما شرمیلا فاروقی نے اپنی ٹوئٹ میں بختاور کی مہندی کے ڈوپٹے کی تصویر کو پوسٹ کرتے ہوئے بتایا کہ ان کے ڈوپٹے پر حسن مجتبیٰ کی مشہور نظم کا شعر ‘وہ لڑکی لال قلندر تھی’ لکھا تھا ۔دوسری جانب ڈان امیجز سے بات کرتے ہوئے ڈیزائنر زارا شاہجہاں کا کہنا تھا کہ میں نے بختاور بھٹو کی خواہش کے مطابق ان کی مہندی کا لباس تیار کیا۔زارا شاہجہاں نے بتایا کہ وہ چاہتی تھیں کہ مہندی کا لباس رنگ برنگا ہو اور درحقیقت ان کی تقریب کی تھیم بھی اسی کلر اسکیم جیسی تھی جیسا انہوں نے لباس پہنا تھا تاہم خوبصورت بنانے کے لیے سندھی کڑھائی اور شیشوں کا استعمال کیا۔انہوں نے بتایا تھا کہ بختاور بھٹو کے لباس پر پھول بنائے گئے تھے اور پر پھول میں بختاور اور محمود چوہدری کے ناموں کی کڑھائی کی گئی تھی، بختاور نے خاص طور پر دوپٹے پر کڑھائی کا کہا تھا۔زارا شاہجہاں نے بتایا کہ انہوں نے خود سے اس لباس کے ساتھ ایک پاؤچ بھی بنایا ہے اور جب اسے کھولا جائے تو اس پر بینظیر بھٹو کا پورٹریٹ بنا ہوا ہے۔زارا شاہجہاں کے مطابق بختاور بھٹو کو وہ لباس پسند آیا تھا جو ماڈل ایمان سلیمان نے پہنا تھا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.